اترپردیشتازہ ترین خبریں

’کسانوں کی خوشحالی کے بغیر ملک کی ترقی ممکن نہیں‘

لکھنؤ، (یو این آئی)
سماجو ادی پارٹی (ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے زرعی قوانین کو دھوکہ قرار دیتے ہوئے کہاکہ کسانوں کی خوشحالی کے غیر ملک ترقی نہیں کر سکتا ہے۔

مسٹر یادو نے پیر کو کہا ہمیر پور میں راٹھ قصبے کے کسانوں سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ بات چیت میں کہا کہ کسان اگر خوشحال نہیں ہے تو ملک ترقی نہیں کر سکتا ہے۔ خوراک کی دستیابی میں کسانوں نے کورونا بحران میں بھی کافی مدد کی ہے۔ لیکن بی جے پی اقتدار میں کسان کافی دکھی ہے۔ بی جے پی نے اس کا بھروسہ توڑا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی سےکسانوں کے ہاتھ خالی ہیں۔ کسان کو نہ تو مکا،دھان کی فصل کی کم از کم سہارا قیمت مل رہی ہے اور نہ اس کی آمدنی دوگنی ہوئی ہے۔ سماج وادی پارٹی نے جو منڈیاں بنوائی تھیں انہیں بھی ختم کردیا گیا ہے۔ آخر کسان کہاں جائیں۔ انہوں نے کہا کہ زرعی اصلاحات کے نام پر متعارف کرائے گئے تین نئے قوانین دھوکہ ہیں۔ بی ج پی نے ہندوستان کی بدنامی کرائی ہے۔ کسان خودکشی کر رہے ہیں۔ اس کسان مخالف حکومت کو ہٹائیں گے۔ لاک ڈاون میں 90 مزدوروں کے مرنے پر سماج وادی پارٹی نے ایک ایک لاکھ روپئے کی مدد کی۔ بندیل کھنڈ کا کسان غریب ہے۔ مہوبہ میں کسانوں کی خودکشی کے معاملے کی جانچ کرائی گئی تھی۔

اس موقع پر جگموہن راجپوت نے کہا کہ کسان آوارہ مویشیوں سے پریشان ہیں۔ کھیت بچانا مشکل ہے۔ مسکر اگاؤں کے علی اکبر منصوری نے بتایا کہ نہر میں پانی نہیں ہے۔ اسی گاؤں کے رام ولاس شکلا سینچائی میں درپیش مشکلات کا ذکر کیا۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close