اپنا دیشتازہ ترین خبریں

پبلک کمپنیوں کوبحران میں ڈال رہی ہے حکومت:سونیا

ترقی پسند اتحاد ( یوپی اے ) کی صدر سونیا گاندھی نے لوک سبھا میں رائے بریلی کی ریل کوچ فیکٹری کے كمپني کاری کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے حکومت پرمخصوص سرمایہ کاروں کوفائدہ پہنچانے کے لئے پپلک کمپنیوں کو بحران میں ڈالنے کا الزام عائد کیا ”َ۔وقفہ صفر میں یہ مسئلہ اٹھاتے ہوئے مسز گاندھی نے کہا کہ حکومت نے ریلوے کی چھ پیداواری یونٹس كمپني کاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس میں رائے بریلی کی ماڈرن ریل کوچ فیکٹری بھی شامل ہے۔

انہوں نے کہا’’ کمپنی کاری نجکاری کا آغاز ہوتا ہے۔ یہ ملک کی اہم املاک کوڑیوں کے بھاوپرائیوٹ کمپنیوں کو فروخت کرنے کاآغاز ہے ۔ ہزاروں لوگ بے روزگار ہو جاتے ہیں‘‘ ْ ۔
یو پی اے سربراہ نے کہا کہ رائے بریلی کی ریل کوچ فیکٹری ہندوستان ریل کا سب سے زیادہ ماڈرن کارخا نہ ہے جہاں سب سے سستےاوراچھےکوچ بنتے ہیں۔ وہاں گنجائش سے زیادہ پیداوارہورہی ہے۔ كپنی کاری سے دو ہزار سے زیادہ مزدوروں،ملازمین اوران کے کنبوں کا مستقبل بحران میں ہے۔

مسز گاندھی نے کہا کہ یہ سمجھنا مشکل ہے کہ حکومت کیوں نجکاری کرنا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا’’کچھ خاص سرمایہ کاروں کو فائدہ پہنچانے کے لئے پبلک کمپنیوں کو خطرے میں ڈالا جا رہا ہے ۔ ہندوستان یئروناٹکس لمیٹڈ اور بی ایس این ایل کے ساتھ کیا ہوا یہ کسی سے پوشیدہ نہیں ہے‘‘۔ انہوں نے الزام لگایا کہ ریل کمپنیوں کے کمپنی کاری کو حکومت نے گہرا راز بنا کر رکھا ۔ یہ فیصلہ کرنے سے پہلےمزدور یونین اور مزدوروں کو بھی اعتماد میں نہیں لیا گیا۔انہوں نے ریل بجٹ کوعام بجٹ میں شامل کر نے پر بھی سوال اٹھایا اور کہا کہ ان تمام معاملات کی پارلیمانی جانچ کی جانی چاہیے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close