اپنا دیشتازہ ترین خبریں

پال گھر لینچنگ معاملہ: 54 ملزمان کی ضمانت منظور

ممبئی/ پالگھر/ مہاراشٹر، (یو این آئی )
تھانہ اسپیشل سیشن جج پی پی جادھو نے جمعرات کے روز 2 سادھووں اور ان کے ڈرائیور کو پالگھر سنسنی خیز لینچنگ کیس میں ملوث 54 ملزموں کو 15-15 ہزار روپے کی ضمانت منظور کر لی ہے۔

دفاعی وکیل امرت ادھیکاری کے مطابق، ضمانت ملنے والوں میں وہ 8 افراد بھی شامل ہیں جنہیں 16 اپریل کو جرم کی اطلاع ملنے کے چند گھنٹوں بعد مقامی پولیس نے گرفتار کیا تھا۔ 54 منظور شدہ ضمانتوں میں سے 46 کو بعد میں سی آئی ڈی نے اس معاملے کی تحقیقات کے دوران گرفتار کیا، اس معاملہ نے ملک گیر افواہوں کو جنم دیا۔ ادھیکاری اور وکیل اتل پاٹل، جو ملزم کسانوں یا قبائلیوں کی نمائندگی کرتے ہیں، نے تھانہ عدالت میں استدلال کیا کہ ان کے مؤکل لنچنگ واقعہ میں ملوث نہیں ہیں اور انہیں محض شک کی بنیاد پر گرفتار کیا گیا ہے۔

سی آئی ڈی نے اس معاملے میں تین الگ الگ چارج شیٹ داخل کی ہیں اور اب تک 118 نابالغوں سمیت مجموعی طور پر 238 ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ان میں سے 9 نابالغ ملزمان سمیت 77 بالغ ملزمان کو ضمانت منظور کرلی گئی ہے، جبکہ مزید 135 ملزمان مفرور ہیں۔ خصوصی وکیل ستیش مان شندے نے سی آئی ڈی کی نمائندگی کی جبکہ متوفی سادھو کے اہل خانہ کی جانب سے ایڈووکیٹ پی این اوجھا پیش ہوئے۔ ادھیکاری کے مطابق، پالگھر پولیس اور سی آئی ڈی نے کل 229 افراد کو گرفتار کیا جن میں سے 28 ملزمان کے خلاف کوئی چارج شیٹ نہیں تھی۔ وکیل نے بتایا کہ باقی 201 افراد میں سے اب تک 86 ملزمان بشمول نابالغوں کو ضمانت مل چکی ہے۔ ادھیکاری نے مزید کہا کہ توقع ہے کہ دیگر ملزمان کی ضمانت کی درخواست 5 دسمبر کو تھانہ عدالت میں پیش ہوگی۔

واضح رہے کہ 16 اپریل کی رات ہی پالگھرمیں لوگوں کی ایک بڑی بھیڑ نے سادھووں- 40 سالہ چکنی مہاراج کلپ وریشھاگری، 35 سالہ سشیلگیری مہاراج اور ان کے ڈرائیور نلیش تلگڈے، 30 سالہ، گڈچینچیلے گاؤں کے باہر ،ممبئی کے تقریبا 135 کلومیٹر شمال میں بے دردی سے قتل کیاتھا۔ ملزموں کی اکثریت گڈچنچلے گاؤں سے تعلق رکھتی ہے، اس کے علاوہ اس کے نواحی گاو ں بھی شامل ہیں جو اس علاقے سے دادرا اور نگر حویلی کے مرکزی خطے سے ملحق ہیں اور اس واقعے سے بمشکل آدھا کلو میٹر دور ہے۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close