اپنا دیش

’مہاراشٹر کے ساتھ مرکز کا سوتیلا سلوک‘

ریاست کے کسانوں کی مدد کرنا تو دور نقصانات کا جائزہ لینے کے لیے ٹیم تک روانہ نہیں کی: بالاصاحب تھورات

ممبئی، (یو این آئی )
بھاری بارش اور سیلاب کی وجہ سے ریاست کے کسانوں کو زبردست نقصان اٹھانا پڑا ہے۔ ایسے میں مرکزی حکومت کو ان کی امداد کے لیے آگے آنا چاہئے تھا لیکن مدد کرنا تو دور دو ماہ گزرنے کے بعد بھی نقصانات کا جائزہ لینے کے لیے مرکزی حکومت نے اپنی ٹیم تک روانہ نہیں کی۔ کسانوں کے نقصانات کے پیشِ نظر ریاست کی مہاوکاس اگھاڑی حکومت نے فوری طور پر 10ہزار کروڑ روپئے کے پیکیج دیا ہے، مگر مرکزی حکومت امداد دینے کے تئیں ڈکار تک نہیں لے رہی ہے۔ مرکزی حکومت کا یہ رویہ ریاستوں کے ساتھ دوہرے پیمانے کو واضح کرتا ہے۔ یہ باتیں آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر و وزیر محصول بالاصاحب تھورات نے کہی ہیں۔

بی جے پی کی انتقام کی سیاست کے بارے میں بات کرتے ہوئے تھورات نے مزید کہا کہ مرکزی حکومت کو اس صورتحال میں ریاست کو مدد فراہم کرنا چاہئے کیونکہ جہاں ایک جانب کورونا بحران کی وجہ سے محصول میں کمی واقع ہوئی ہے تو دوسری طرف بحرانوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ مگر افسوس کہ ایسا ہوتا ہوا نظر نہیں آرہا ہے۔ اس کے برعکس جی ایس ٹی کی واپسی اور ریاستوں کے حقوق کے دیگر رقومات تک ادا نہیں کی جارہی ہیں۔ مرکز کی بی جے پی حکومت اپوزیشن حکومتوں کو الجھانے کی کوشش کر رہی ہے۔

شیوسینا کے ایم ایل اے پرتاپ سرنائیک کے خلاف ای ڈی کی جانب سے کی جانے والی کارروائی پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تھورات نے کہا کہ یہ کانہایت بدبختانہ و قابل اعتراض کارروائی ہے۔ مرکز کی بی جے پی حکومت انتقام کے تحت یہ کارروائی کررہی ہے اور بی جے پی کے خلاف بولنے والوں کی آوازوں کو دبانے کی کوشش کر رہی ہے۔ سیاسی وجوہات کی بناء پر مرکز کی تحقیقاتی مشینری جیسے ای ڈی و سی بی آئی کو استعمال کرکے حزب اختلاف کو ڈرانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ ایسا کارروائیاں بی جے پی کے اقتدار والی ریاستوں میں نظر نہیں آتی ہیں۔

بجلی بلوں کے بارے میں بی جے پی کے احتجاج پر تنقید کرتے ہوئے تھورات نے کہا کہ کانگریس کو بھی اس بات کا احساس ہے کہ عوام کو بجلی بلوں پر مراعات ملنی چاہئے لیکن مرکزی حکومت عوام کو روزانہ لوٹ رہی ہے۔ایسے وقت میں جب کہ عالمی سطح پر خام تیل کی قیمتیں نہایت کم ہیں،ملک میں پٹرول وڈیژل مہنگے داموں فروخت کرکے مرکزی حکومت عوام کو لوٹ رہی ہے۔ بجلی بلوں کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو مرکزی حکومت کی اس لوٹ مار کے خلاف بھی احتجاج کرنا چاہئے۔

بالاصاحب تھورات نے کہا کہ بی جے پی لیڈران مہا وکاس اگھاڑی حکومت کے گرنے کا خواب دیکھ رہے ہیں۔وہ یہ خواب دیکھتے رہیں۔ اسی طرح میں دوبارہ آؤں گا کا نعرہ لگانے والوں کیا ہوا؟ یہ ہم دیکھ ہی رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مہاراشٹر میں بی جے پی کا کوئی بھی آپریشن کامیاب نہیں ہوگا۔ تھورات نے اس اعتماد کا بھی اظہار کیا کہ مہا وکاس اگھاڑی حکومت نے اپنی ایک سالہ میعاد پوری کرلی ہے اور اگلی چار سالہ مدت بھی پوری کرے گی۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close