اپنا دیشتازہ ترین خبریں

مہاراشٹر نتائج: بی جے پی-شیوسینا کی جیت

مہاراشٹر میں اپوزیشن کانگریس-نیشنلسٹ کانگریس پارٹی محاذ نے 288 ممبران کی اسمبلی میں بی جے پی – شیوسینا کی 160 نشستوں کے مقابلے میں 100 نشستوں پر کامیابی حاصل کرلی ہے۔ جبکہ باقی نشستوں پر آزاد اور چھوٹی جماعتوں نے فتح حاصل کرکے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ ان نتائج نے بی جے پی کے ان دعووں کی قلعی کھول دی ہے کہ بھگوا محاذ 250 کا عدد چھولے گی، لیکن رائے دہندگان نے ان کے دعوے جھٹلا دئیے ہیں۔

اس موقع پراین سی پی کے صدر شرد پوار نے واضح الفاظ میں اعلان کیا کہ "عوام نے فریب دینے والوں کو سبق سکھا دیا ہے اور انہیں مسترد کر دیا ہے” اوراس انتخابات میں جو اچھے نتائج سامنے آئے ہیں اوراس جیت کے لیے این سی پی اور اتحادی کانگریس کارکنوں کی محنت اور سرگرمی رنگ لائی ہے ، جو نتائج سامنے آئے ہیں، وہ تین دن قبل مختلف ایگزٹ پول کی پیش گوئیاں سے دور ہیں۔

ان نتائج کی مدنظر شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ سنجے راؤت نے آج کہاکہ یہ ایسا موقعہ ہے کہ بی جے پی 50:50 کے فارمولے پر عمل کرے ۔اس درمیان برسر اقتدار اور حزب مخالف کے کئی سرکردہ لیڈران کو شکست کامنہ دیکھنا پڑا ہے، جن فڈنویس کابینہ کی خاتون وزیربیڑ ضلع میں پرلی سے پنکجا منڈے اور ستارا لوک سبھا کے ضمنی امیدوار چھترپتی ​​ادیانجے بھونسلے کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے، پنکجا، آنجہانی گوپی ناتھ منڈے کی بیٹی ہیں اور انہیں چچا زاد بھائی نے ہرایا ہے۔

دونوں کو حریف نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے دھننجئے منڈے اور شری نیواس دادا صاحب پاٹل نے ہرایا ہے، ان نتائج نے بی جے پی کو حیرت زدہ کردیا۔ کیونکہ وزیر اعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ اور بی جے پی صدر امت شاہ نے منڈے کے لئے انتخابی مہم چلائی تھی۔ بھونسلے سین سی پی سے بی جے پی۔میں آئے تھے اور شیواجی مہاراج کی نسل سے تعلق رکھتے ہیں۔

شیوسینا میں ممتاز ہارنے والوں میں باندہ مشرق حلقہ سے ممبئی کے میئر وشوناتھ مہاڈیشور بھی شامل ہیں. جبکہ کانگریس کے اسمبلی میں ڈپٹی لیڈر نسیم عارف خان بھی محض 400ووٹوں سے ہار گئے ہیں، یہاں بھی کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے انتخابی جلسہ سے خطاب کیا تھا۔ ممبئی کے۔ میئر مہاڈیشور کو سابق وزیر بابا صدیقی کے بیٹے ذیشان صدیقی کامیاب ہوئے، مذکورہ مضافاتی علاقے میں شیوسینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے کی رہائش گاہ واقع ہے۔ جبکہ ادھو کے صاحب زادے ادیتہ ٹھاکرے ورلی حلقہ سے کامیاب ہوئے ہیں، ٹھاکرے خاندان کے پہلے شخص ہیں جو کہ ایوان میں پہنچے ہیں۔نالا سوپارہ میں سابق پولیس افسر پردیپ شرما کو شکست ہوئی جو شیوسینا کے امیدوار ہیں۔

شیوسینا کے ایک سینئر رہنما نے اشارہ دیا کہ حتمی نتائج کے بعد غوروخوض کیا جائیگا، اس موقع پر ادھو ٹھاکرے نے واضح طور پر، 50-50 کے فارمولے کا ذکر کیا ہے اور ایک سوال کے جواب پر کہاکہ شردپوار کی این سی پی کی بہتر کارکردگی پر خوشی کا اظہار کیا۔ اس پس منظر میں، آزاد امیدواروں اور چھوٹی جماعتوں کا کردار اہمیت کا حامل ہو سکتا ہے جیساکہ بہت سے انتخابی حلقوں میں ہوا ہے، انہوں نے حکمران اتحاد کے امیدواروں کو پریشان کیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close