تازہ ترین خبریںدلی نامہ

شہریت ترمیمی قانون: متعدد لیڈرز اور طلبا و طالبات پولیس حراست میں

شہریت قانون کے خلاف احتجاج و مظاہرہ کر رہے کانگریس لیڈر سندیپ دیکشت، سوراج انڈیا کے لیڈر یوگیندر یادو اور بڑی تعداد میں طلبا و طالبات کو آج پولیس نے قومی دارالحکومت میں حراست میں لے لیا۔

منڈی ہاؤس کے قریب جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے طلبا طالبات اور دیگر لوگوں کو بھی حراست میں لیا گیا۔ مسٹر دیکشت کو منڈی ہاؤس کے قریب اور مسٹر یادو کو لال قلعہ کے قریب پولیس نے حراست میں لیا۔ مسٹر دیکشت نے کہا کہ وہ لال قلعہ جا رہے تھے لیکن پولیس نے انہیں وہاں نہیں جانے دیا اور حراست میں لے لیا۔ انھوں نے کہا کہ وہ کل بھی یہاں آئیں گے اور احتجاج کریں گے۔

مسٹر دیکشت نے کہا کہ حکومت کو شہریت ترمیمی قانون واپس لینا چاہیے اور گھبراہٹ میں لوگوں کو ان کے حقوق سے محروم نہیں کرنا چاہیے۔ منڈی ہاؤس کے قریب دفعہ 144 نافذ ہے اس کے باوجود طلبا و طالبات وہاں آ رہے ہیں جنہیں پولیس حراست میں لے رہی ہے۔ مظاہرین کچھ مقامات پر تختیاں لیے ہوئے تھے اور وہ مودی حکومت کے خلاف نعرے لگا رہے تھے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close