Khabar Mantra
تازہ ترین خبریںدلی نامہ

سب تدبیریں پڑیں الٹی، سراج الدین قریشی کی چوتھی مرتبہ تاریخی جیت

سیویئر ٹیم پر سراج الدین قریشی کے پینل کی فتح، ایس ایم خان، ابرار احمد، ابو ذر حسین خان، احمد رضا، جمشید زیدی، محمد شمیم، شرافت اللہ، بدر الدین خان، بہار برقی، شہانہ بیگم، سکندر حیات اور قمر احمد فاتح...

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
انڈیااسلامک کلچرل سینٹر کے انتخابات میں سراج الدین قریشی نے مسلسل چوتھی مرتبہ تاریخی جیت درج کرائی ہے۔ جبکہ نائب صدر کے عہدے کے امیدوار ایس ایم خان نے بھی تاریخی جیت حاصل کی ہے۔ سراج الدین قریشی نے 1339 ووٹ حاصل کرکے عارف محمد خان کو 637 ووٹوں سے شکت دی۔ عارف محمد خان 702ہی ووٹ حاصل کر سکے۔ جس کے بعد سراج الدین قریشی ایک بار پھر سینٹر کے صدر منتخب ہو گئے ہیں۔ وہیں ایس ایم خان نے 1036 ووٹ حاصل کرکے جیت درج کرائی۔ سراج قریشی اور ان کے پینل کا مقابلہ عارف محمد خان اور ان کی سیویئر ٹیم سے تھا۔ جس میں سیویئر ٹیم کو کراری شکست کا سامنا کرنا پڑا اور سیویئر ٹیم کا ایک بھی امیدوار جیت سے ہمکنار نہ ہو سکا۔ لیکن سراج قریشی کے پینل میں بورڈ آف ٹرسٹیز کے امیدوار نثار احمد کو شکست ہو ئی، ان کو آئی پی ایس (رٹائرڈ ) قمر احمد نے 304 ووٹوں سے شکست دی۔

فتح ہوئے امیدواروں میں صدر عہدے کےلئے سراج الدین قریشی نے 1339ووٹ حاصل کئے، نائب صدر کے لئے ایس ایم خان نے 1036 ووٹ لئے، بی او ٹی کےلئے ابرار احمد کو 1232، ابو زر حسین خان کو 1038ووٹ، احمد رضا کو 838 ووٹ، جمشید زیدی کو 833ووٹ، شرافت اللہ کو 845 ووٹ، شمیم احمد 697 ووٹ، قمر احمد کو 983 ووٹ ملے۔ وہیں ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبر کےلئے بدرالدین خان کو 1022 ووٹ ملے، شہانہ بیگم کو 994، سکندر حیات کو 980 ووٹ اور بہار برقی کو 897 ووٹ ملے۔ واضح رہے کہ گزشتہ دیر رات تک اور آج صبح سے جاری ووٹوں کی گنتی کے طویل انتظار کے بعد دوپہر کے بعد انڈیا اسلامک کلچرل سینٹر کے انتخابات کے نتائج منظر عام پر آ سکے۔

تاریخی جیت پر اظہار تشکر کرتے ہوئے ایک بار پھر سینٹر کے صدر منتخب ہوئے سراج الدین قریشی نے کہا کہ یہ ممبران کی اور ان تمام لوگوں کی جیت ہے جو اسلامک سینٹر کو غلط ہاتھوں میں جانے دینا نہیں چاہتے ۔ انہوں نے کہا کہ مخالف امیدواروں نے ہمیں خوب بدنام کرنے کی کوشش کی، لیکن ان کو نہیں معلوم کہ انڈیا اسلامک کلچرل سینٹر کے اغراض و مقاصد پر کتنا کام کیا جا رہا ہے۔ لیکن انہوں نے بد نام کر نے کی کوشش کی، ذاتیات پر حملہ کیا، سینٹر پر حملہ، اس کو کلب، شادی خانہ کہا، انہوں نے یہ نہیں دیکھا کہ 15ہزار سے زیادہ بچے پڑھ کر نکل چکے، یہاں اردو، انگلش، عربی کی کلاسیں ہوتی ہیں، قرآن پر درس ہوتا ہے، ورک شاپ لگتی ہیں، پرسنلٹی ڈیولپمنٹ اور اسکیل ڈیولپمنٹ میوموری ڈیولپمنٹ کے پروگرام ہوتے ہیں۔ یہاں دنیا کے صدور اور بادشاہ آ چکے ہیں، انڈیا اسلاممک کلچرل سینٹر کا دنیا میں بڑا نام ہے۔ انہوں نے کہا کہ سینٹر کی توسیع کی جائے گی، یہاں دو منزلہ نیچے اور دو منزلہ اوپر سینٹر کی تعمیر کا کام کرایا جائے گا۔

انہون نے کہا کہ مخالفین بھلے ہی جم کر بدنام کرنے کی کوشش کیں اور ہر حربہ استعمال کیا لیکن ان کی تمام کو ششوں پر انڈیا اسلامک سینٹر کی ترقی چاہنے والوں نے پانی پھیر دیا اور سینٹر کو غلط ہاتھوں میں جانے سے بچایا۔ جس کےلئے ہم ان تمام افراد کے شکر گزار ہیں جنہوں نے سینٹر کے تحفظ کےلئے کام کیا۔ نو منتخب نائب صدر شہزاد محمد خان نے کہا کہ یہ تاریخی جیت ہے، جن ممبران نے ہمیں ووٹ دیا ہم ان کے شکر گزار ہیں۔ ہم سینٹر کی ترقی اور قوم کے فلاحی کام انجام دیتے رہیں گے۔

ایگزیکٹو کمیٹی کے نو منتخب ممبربدرالدین خان نے تمام ووٹر اور سپوٹرس کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان لوگوں کی جیت ہے جو واقعی انڈیا اسلامک کلچرل سییٹر کو ایک قومی ادارے کے طور پر دیکھتے ہیں اور اسکی ترقی چاہتے ہیں۔ ہم سراج الدین قریشی کی سینٹر کے تئیں کی گئی خدمات کو دیکھ کر ان کی قربانیوں کو دیکھتے ہوئے ان کے بازو بن کر سینٹر کی خدمت کےلئے آئے ہیں۔ قوم اور سینٹر کی ترقی اور خدمت کے جذبہ کے ساتھ کا م کریں گے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close