Khabar Mantra
تازہ ترین خبریںدلی نامہ

زرعی قوانین پر ’کانگریس‘ اور ’آپ‘ آمنے سامنے

راگھو چڈھا نے کسانوں کو دھوکہ دینے پر کانگریس اور پنجاب کے وزیراعلیٰ کیپٹن امریندر سنگھ کو بنایا نشانہ، استعفیٰ کا کیا مطالبہ.....

نئی دہلی(امیر امروہوی)
کانگریس کے زیر اقتدار پنجاب کے سی ایم کیپٹن امریندر سنگھ نے تینوں سیاہ قوانین کو نافذ کرکے اپنی ریاست میں کسانوں کے ساتھ سب سے بڑی غداری کی ہے۔ پنجاب کے وزیر بھارت بھوشن آشو نے اعتراف کیا ہے کہ پنجاب میں تینوں سیاہ قوانین نافذ کیے گئے، جس کے مطابق آئندہ فصلوں کی خرید و فروخت کی جائے گی اور اب ریاست میں مزید کوئی ایم ایس پی نہیں ہے۔ کیپٹن امریندر نے دعوی کیا تھا کہ اسمبلی کے خصوصی اجلاس میں پنجاب میں تینوں کالے قوانین کو نافذ نہیں کیا جائے گا، انہوں نے جھوٹ بولا تھا کسانوں کی روحیں جنہوں نے اپنی شہادت دی ہے ان کے اہل خانہ کیپٹن سنگھ سے پوچھ رہے ہیں کہ تینوں کالے قوانین کو کیوں نافذ کیا گیا؟ ان خیالات کا اظہار عام آدمی پارٹی کے ایم ایل اے اور پنجاب کے انچارج راگھو چڈھا نے پارٹی صدر دفتر دہلی میں منعقدہ پریس کانفرنس میں کیا۔

میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے راگھو چڈھا نے کہاکہ کیپٹن امریندر نے تینوں کالے قوانین کو نافذ کرکے، پنجاب کے عوام کو بی جے پی کے ہاتھوں فروخت کر دیا گیا ہے۔ اس غداری پر پنجاب کے عوام انہیں کبھی معاف نہیں کریں گے عام آدمی پارٹی کیپٹن امریندر سنگھ سے استعفے کا مطالبہ کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی اور امرندر سنگھ تینوں زرعی کالے قوانین کی مخالفت کرتے تھے راہل گاندھی خود اس بارے میں مسلسل سوشل میڈیا پر اس کے خلاف بیان دے رہے ہیں۔ کانگریس کے سینئر لیڈران باقاعدگی سے اس پر پریس کانفرنس کرتے رہے، پنجاب سے تعلق رکھنے والے کانگریس کے کچھ ارکان پارلیمنٹ 10-15 دنوں تک جنتر مانٹر پر مظاہرہ کرتے رہے اور کانگریس کی جانب سے ان کالے قوانین کے بارے میں مستقل بیانات دیئے جا رہے تھے میڈیا کو بائٹس دی جا رہی تھی، بیانات پر بیانات جاری کیے جا رہے تھے اور یہ ظاہر کرنے کی کوشش کی جارہی ہے کہ ہم ان تینوں کالے قوانین کے خلاف ہیں۔ راگھو چڈھا نے دعوی کیا کہ کانگریس اور کیپٹن امریندر سنگھ نے کسانوں کے ساتھ چھل کپٹ کیا ہے۔ پنجاب میں کانگریس کے وزیر بھارت بھوشن آشوجی جو لدھیانہ کے ایم ایل اے ہیں اور پنجاب میں آشو کے نام سے جانے جاتے ہیں انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ پنجاب میں کانگریس حکومت نے ان تینوں کالے قوانین کو نافذ کر دیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب سے باہر کوئی بھی کسان اب آکر پنجاب میں اپنی فصل بیچ سکتا ہے۔ ریاست میں اب ایم ایس پی اور منڈی کے نام سے کچھ نہیں بچا ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ یہ ملک کے عوام، پنجاب کی سرزمین اور کسانوں کے ساتھ دھوکہ کر رہی ہے۔ کیپٹن امریندر سنگھ وزیر اعلی ہیں جو پچھلے کئی مہینوں سے اس کسان مخالف بل کی کھلے عام مخالفت کر رہے ہیں۔ انہوں نے پنجاب قانون ساز اسمبلی کا خصوصی اجلاس طلب کیا تھا اور کہا تھا کہ میں نے پنجاب میں تینوں کالے قوانین کو نافذ ہونے سے روک دیا ہے۔ اب یہ تینوں قوانین میری ریاست میں لاگو نہیں ہوں گے، لیکن انہوں نے ریاست کے لوگوں سے جھوٹ بولا، جھوٹے آنسو بہائے اور یہاں تک کہ کیمرے کے سامنے صحافیوں سے بھی جھوٹ بولا۔ سچ تو یہ ہے کہ کیپٹن امریندر سنگھ نے پنجاب میں تینوں کالے قوانین کو نافذ کر دیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close