اپنا دیشتازہ ترین خبریں

حکومت ضد چھوڑ کر سی اے اے واپس لے: مایاوتی

بہوجن سماج پارٹی(بی ایس پی) نے شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ملک گیر پیمانے پر ہو رہے احتجاج کے بعد مرکزی حکومت سے اس متنازع قانون کو واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ بی ایس پی سپریمو نے سنیچر کو اس ضمن میں کئے گئے اپنے ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ“اب تو نئے شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت میں مرکزی حکومت کے این ڈی اے میں بھی مخالفت کی آواز اٹھنے لگی ہے۔ لہذا بی ایس پی کا مطالبہ ہے کہ اپنی ضد کو چھوڑ کر ان فیصلوں کو واپس لے۔ ساتھ ہی احتجاجی مظاہرہ کرنے والے افراد سے بھی اپیل ہے کہ وہ اپنا احتجاج پر امن طریقے سے ظاہر کریں”۔

وہیں کانگریس لیڈر و راجیہ سبھا رکن کانگریس لیڈر اور راجیہ سبھا رکن پی ایل پنیا نے وزیر اعظم نریندر مودی سے شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ملک گیر پیمانے پر ہو رہے احتجاج کے بعد اس ضمن میں شبہات کے ازالے کے لئے آل پارٹی میٹنگ بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔ مسٹر پنیا نے سنیچرکو بتایا کہ قانون پر اگر کوئی افواہ ہے تو وزیر اعظم اور وزیر داخلہ امت شاہ کو آل پارٹی میٹنگ بلا کر ان شبہات کو ختم کرنے کے لئے حقیقی معاملے کی وضاحت کرنی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ راجیہ سبھا میں جس دن شہریت ترمیمی بل پاس کیا گیا تھا اس دن وزیر داخلہ نے صاف کہا تھا کہ ملک میں این آر سی بھی نافذ کیا جائے گا۔ اس سے شہریوں شبہ پیدا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم اور نریندر مودی کو پہلے تو اس بل کو پارلیمنٹ میں رکھنے سے پہلے سبھی پارٹیوں کے لیڈروں سے بات کرنی چاہئے تھی لیکن انہیں ایسا نہیں کیا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close