اپنا دیشتازہ ترین خبریں

حج میں شفافیت لانے اور بچولیوں کو ختم کئے جا نے کے نتیجہ میں بغیر سب سیڈی کے بھی حج ہوا سستا

حج ہائوس میں خادم الحجا ج کے دو روزہ تربیتی کیمپ کے افتتاح پر مرکزی اقلیتی وزیر مختار عباس نقوی کا خطاب

نئی دہلی ممبئی(انور حسین جعفری) حج مشن 2019کا باقائدہ آغاز ہو چکا ہے۔ حج بیت اللہ کے مبار ک سفر جا نے کے خواہشمندوں کا قرعہ اندازی کے ذریعہ انتخاب ہو نے کے بعد حج کی ایڈدوانس رقم جمع کی جا رہی ہے۔ منتخب عازمین حج کو تریبت دینے کےلئے ٹرینرس کی ٹرینگ کے بعد حاجیوں کی خدمات کےلئے جا نے والے خادم الحجاج کی تربیت کےلئے مرکزی وزیر اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے آ ج حج کمیٹی آف انڈیا، حج ہائوس ممبئی میں خادم الحجا ج کے دو روزہ حج تربیتی پرو گرام کا افتتاح کیا۔ جس میں ملک بھر کی ریاستی حج کمیٹیوں کے 538خادم الحجا ج شریک ہوئے۔ بتا دیں کہ بغیر محرم کے حج پر رو انہ وہ نے والی خواتین عازمین کےلئے علیحدہ سے خواتین خادم الحجا ج گزشتہ برس سے روا نہ کی جا رہی ہیں ۔ان میں اس برس 13 خواتین خادم الحجاج کو بھی اس تربیتی پرو گرام میں تربیت دی گئی۔

خادم الحجا ج کے و روزہ تربیتی پرو گرام کی افتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے کہا کہ مودی حکومت کی جانب سے حج کے مکمل عمل کو سو فیصد آن لائن، ڈیجیٹل کرنے سے جہاں ایک جانب شفافیت یقینی ہوئی ہے وہیں دوسری طرف حج سستاہوا ہے۔ جس سے ہندوستان سے حج پرجانے والے لوگوں کو سہولت ملی ہے ۔انہوںنے کہاکہ حج کے عمل میں شفافیت کے چلتے اور بچولیوں کا کردار ختم کئے جانے سے ہوائی کرایہ میں کمی آئی تھی۔ جہاں گزشتہ سال حج مسافروں کو 57 کروڑ روپے کی بچت ہوئی تھی، وہیں اس سال حج پر لگنے والے 18 فیصد جی ایس ٹی کو 5 فیصد کر دیا گیا ہے جس سے حج 2019 پر جانے والے عازمین حج کو 113 کروڑ روپے کی بچت ہو گی۔اس کے علاوہ تمام امبارکیشن پوائنٹس سے حج سفر کے لئے ہوائی جہاز کے کرایہ میں کمی آئے گی۔

وزیر موصوف نے کہاکہ گزشتہ سال حج سبسڈی ختم کی گئی تھی۔لیکن حج کے سفر میںشفافیت کو یقینی بنانے اور بچولیوں کا کردار ختم کئے جانے کا نتیجہ ہے کہ حج سبسڈی ختم ہونے کے باوجود حج مہنگا نہیں ہوا ہے ۔ نقوی نے کہا کہ 2018 میں آزادی کے بعد پہلی بار ریکارڈ 1 لاکھ 75 ہزار 25ہندوستانی مسلمان بغیر سب سب سیڈی کے حج پر روا نہ ہو ئے ،جن میں تقریبا 48 فیصد خواتین شامل تھی۔حج2019 میں بھی ہندوستان سے 1 لاکھ 75 ہزار 25 مسلمان حج پر جائیں گے۔ مختارنقوی نے کہا کہ آزادی کے بعد پہلی بارملک سے 2340 مسلم خواتین بغیر محرم کے اس سال حج کے سفر پر جائیں گی۔ گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی وزیر اعظم نریندرمودی کی ہدایت پر بغیر محرم کے حج پر جانے کےلئے درخواست دینے والی ان تمام خواتین کوبغیر قرعہ اندازی کے حج سفر پر جانے کا انتظام کیا گیا ہے۔ 2018 میں پہلی بار مرکز کی مودی حکومت نے مسلم خواتین کو بغیر محرم کے حج سفر پر جانے پر لگی پابندی کو ختم کر دیا تھا،جس کی وجہ سے 2018 میں 1300 کے قریب مسلم خواتین بغیر محرم حج کے سفر پرگئی تھیں۔ انہیں بغیرقرعہ حج کے سفر پر بھیجا گیا تھا۔مختار عباس نقوی نے کہا کہ اقلیتی وزارت نے سعودی عرب حج قونصل خانہ، حج کمیٹی آف انڈیا اور دیگر متعلق ایجنسیوں کے

ساتھ مل کر حج 2019 کے عمل طے وقت سے تین ماہ پہلے شروع کیا، جس سے اس سال ہندوستان سے حج پر جانے والے عازمین حج کو بہت سہولت ہوگی۔ خادم الحجاج کے دو روزہ حج تریبتی پرو گرام کے افتتاحی پرو گرام میں حج کمیٹی آف انڈیا، ممبئی مہا نگر پالیکا ، ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسیوں کے افسران، ایر لائنز، کسٹم ، امیگریشن محکموں کے افسروں اور ڈاکٹروں نے حج سے متعلق مکہ مدینہ میںحاجیوں کی رہائش، ٹریفک، صحت، سلامتی سے متعلق مسائل کی مختلف معلومات فراہم کی ۔

واضح رہے کہ عازمین حج کی خدمت کےلئے ریاستی حج کمیٹیوں سے 200عازمین حج پر ایک خادم الحجاج سعودی عرب روانہ کیا جا تا ہے ۔ اس کےلئے علاوہ حج اسسٹنٹ ، اوور سین آفیسر اور حج ڈیوٹی پرڈاکٹروں ، نرسوں کی ٹیم اور مختلف محکموں کے افرادحاجیوںکی سہولت کےلئے سعودی عرب روا نہ کئے جا تے ہیں۔ یہ الگ بات ہے کہ سعودی عرب پہنچنے کے بعد خادم الحجا ج، حج اسسٹنٹ، اوور سین آفیسر اور حج دیوٹی اور ڈیپوٹیشن پر گئے یہ لوگاپنے فرض کی ادائیگی کے بجائے اپناحج ادا کر نے میں مصروف ہو جا تے ہیں اورہندوستانی حاجی سعودی عرب میں بے یارو مددگار مارے مارے پھرتے ہیںاور مختلف مسائل سے دو چار ہو تے ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close