تازہ ترین خبریںدلی نامہ

بی جے پی لیڈر ذولفقار قریشی اور ان کے بیٹے کا گولی مار کر قتل

ذولفقار قریشی (50) سال کی موقع پر موت، جبکہ بیٹے جانباز قریشی (22) سال نے اسپتال میں توڑا دم، پولس معاملے کی کر رہی ہے تفتیش

نئی دہلی (امیر امروہوی)
راجدھانی دہلی مجرموں کی آماجگاہ بن گئی ہے بدمعاشوں کے حوصلے اس قدر بلند ہیں کہ وہ دن دہاڑے لوٹ پاٹ قتل و غارت گری کھلے عام انجام دے رہے ہیں، پولس کا خوف ایسے غنڈا عناصر لوگوں میں ردی بھر بھی نہیں پایا جاتا۔ لوگ عدم تحفط میں مبتلا ہو رہے ہیں کچھ علاقوں مین لوگ رات تو رات دن میں بھی خوف کے ماحول میں زندگی گزار رہے ہیں۔ایسا ہی ایک واقعہ شمال مشرقی دہلی کے ضلع نند نگری تھانہ کے تحت آنے والی سندر نگری کالونی کے او بلاک میں پیش آیا جہاں نورانی مسجد کے باہر آج صبح نماز فجر کے بعد بدمعاشوں نے بی جے پی (BJP) اور آر ٹی آئی (RTI) کارکن ذولفقار قریشی (Zulfikar Qureshi) اور اس کے بیٹے جانباز قریشی کا گولی مار کر قتل کر دیا۔

واردات کے وقت دونوں باپ بیٹے مسجد میں نماز فجر ادا کرنے کے لیے آئے تھے اس دوران تین بدمعاشوں نے ان پر حملہ کر دیا، ذولفقار قریشی کو بیحد قریب سے4 سے 5 گولیاں ماری گئی اپنے والد کو بچانے آئے بیٹے پر پہلے بدمعاشوں نے چاقو سے حملہ کیا اور بعد میں اس کی پیٹھ میں گولی مار دی، علاقائی لوگوں نے فوراً اس واردات کی پولیس کو اطلاع دی پولیس نے ذولفقار کی لاش کو قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے جی ٹی بی اسپتال واقع مردہ گھر پہنچایا اور شدید طور سے زخمی جانباز کو پہلے سوامی دیانند اسپتال لے گئی اور یہاں حالت بگڑنے پر صفدر جنگ اسپتال میں ریفر کر دیا گیا جہاں اس کی کچھ وقفہ کے بعد موت واقع ہو گئی۔ ذولفقار قریشی بی جے پی اقلیتی مورچہ کے علاوہ آر ایس ایس کے اندریش کمار کے ہمالیہ فیملی سے بھی جڑے تھے۔

پولیس کے مطابق ذولفقار اپنے اہل خانہ کے ساتھ سندر نگری کالونی کے او بلاک میں رہتے تھے ان کے کنبہ میں اہلیہ ریشما کے علاوہ تین بیٹے جانباز (جس کا قتل ہو چکا ہے) کیف 11 سال اور زید قریشی 10سال ہیں، ذولفقار قریشی این جی او (NGO) چلانے کے علاوہ نند نگری علاقہ میں غیر قانونی کاموں کے خلاف آر ٹی آئی لگا کر آواز اٹھاتے رہتے تھے جس کی وجہ سے ان کے اوپر کئی مرتبہ جان لیوا حملے ہونے پر دہلی پولیس نے پی ایس او بھی دیا ہوا تھا جو فی الحال صبح 9 بجے سے رات 10 بجے تک ہی ان کے ساتھ رہتا تھا۔

شمال مشرقی ضلع پولیس کے ڈپٹی کمشنر وید پرکاش سوریہ نے بتایا کہ آپسی رنجش کے تحت واردات کو انجام دیا گیا ہے، قتل کا معاملہ درج کرکے جانچ شروع کر دی گئی ہے، پولیس نے ملزموں کی پہچان کر لی ہے اور جلد ہی انہیں گرفتار کر لیا جائے گا۔ ڈپٹی کمشنر وید پرکاش نے یہ بھی جانکاری دی کہ ذولفقار اور اس کے بیٹے جانباز پر بھی کئی ملزمانہ معاملے درج ہونے کے علاوہ ذولفقار قریشی نند نگری تھانہ کا بی سی (اعلانیہ بدمعاش) بھی رہا ہے، بہر حال فی الحال پولیس معاملے کی تفتیش کرنے کے علاوہ ملزموں کی تلاش میں لگی ہے۔

 

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close