اترپردیشتازہ ترین خبریں

بابری مسجد: 28 ویں برسی پر سیکیورٹی چاک وچوبند، اضافی پولیس فورس تعینات

ایودھیا، (یو این آئی)
ایودھیا میں متنازعہ ڈھانچہ گرائے جانے کی 28 ویں برسی پر حفاظت کے پختہ انتظام کیے گئے ہیں۔

پولیس سپرنٹنڈنٹ (شہر) وجے پال سنگھ نے آج یہاں یہ معلومات دی۔ انہوں نے بتایا کہ ایودھیا میں بابری مسجد کی 28 ویں برسی پر ایودھیا میں سیکیورٹی چاک و چوبند کرنے کے ساتھ چوکسی بڑھادی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ایودھیا میں یومیہ پولیس فورس کے علاوہ چھ دسمبر کواضافی پولیس فورس تعینات کی گئی ہے جس میں پی اے سی کی کئی کمپنی لگائی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع کے چاروجانب لگے بیرئرپر بھی چیکنگ کرنے کے بعد ہی کسی کو داخل ہونے دیا جارہا ہے۔

مسٹر سنگھ کے مطابق حفاظت کےسخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ سری رام جنم بھومی پر تعمیر ہورہے مندرکے آس پاس بھی اضافی سیکیورٹی فورس تعینات کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مشہورہنومان گڑھی مندر، کنک بھون مندر سمیت مختلف مندروں میں بھی سیکیورٹی انتظامات بڑھا دیئے گئے ہیں کیونکہ ایودھیا میں دہشت گردانہ واقعات کا خدشہ ہمیشہ بنا رہتاہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ سٹی نے بتایا کہ اتوار کو کسی بھی تنظیم نے کوئی پروگرام کرنے کی درخواست نہیں دی ہے اور نہ ہی کوئی پروگرام مسلم سماج کی جانب سے اور نہ ہی ہندو تنظیم کی جانب سے آیا ہے اس لیے اجودھیا پرسکون ہے۔

مسلم مجلس کے ریاستی صدر محمد ندیم صدیقی اورانڈین مسلم سماج کے حاجی محمد اسماعیل انصاری نے کہا ہے کہ ملک کے آئین و جمہوریت، عدلیہ کی بالادستی کو کچلتے ہوئے چھ دسمبر 1992 کو بابری مسجد شہید کردی گئی تھی۔ کل یوم سیاہ و یوم سوگ کے طور پر منایا جائے گا۔ لوگوں سے یہ بھی اپیل کی گئی ہے کہ کووڈ-19 کے گائیڈ لائن کی پیروی کرتے ہوئے اس دن اجتماعی وذاتی طور سے مسجدوں اور گھروں میں بازوپر سیاہ پٹی باندھ کراظہارسوگ کریں جس سے ملک میں آئین و جمہوریت کو بحال کرنے میں مضبوطی مل سکے۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close