تازہ ترین خبریںکھیل کھلاڑی

انڈیا بمقابلہ آسٹریلیا: ٹیم انڈیا کی مشکلات میں اضافہ، روہت-ایشانت پہلے دو ٹسٹ سے باہر

India vs Australia: چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے باقی دو ٹسٹوں میں بھی ان کا کھیلنا مشکوک ہے۔ جبکہ وراٹ کوہلی پہلے ٹسٹ کے بعد اپنے بچے کی پیدائش کی وجہ ملک لوٹ آئیں گے، اب اسٹار کھلاڑیوں کی عدم موجودگی میں ہندوستانی ٹیم کے لئے حالات کتنے مشکل ہوسکتے ہیں یہ دیکھنے والی بات ہے۔

نئی دہلی، (یو این آئی)
سلامی بلے باز روہت شرما اور تیزگیندباز ایشانت شرما آسٹریلیا کے خلاف پہلے دو ٹسٹ سے باہر ہو گئے ہیں اور چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے باقی دو ٹسٹوں میں ان کا کھیلنا مشکوک ہے۔

بتا دیں کہ روہت شرما (Rohit Sharma) ہیمسٹرنگ چوٹ سے اور ایشانت عضلات میں کھینچاؤ کی پریشان سے نجات حاصل کر رہے ہیں۔ دونوں کو یہ چوٹ یو اے ای میں آئی پی ایل کے دوران لگی تھی۔ ایشانت شرما (Ishant Sharma) تو آئی پی ایل بیچ میں چھوڑ کر ملک واپس آگئے تھے جبکہ روہت اپنی ٹیم ممبئی انڈینس کو پانچویں مرتبہ آئی پی ایل چیمپئن بناکر ملک لوٹے ہیں۔ دونوں بنگلور واقع نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں ری ہیبلی ٹیشن سے گزر رہے تھے۔

ٹیم انڈیا کے چیف کوچ روی شاستری نے حال ہی میں کہا تھا کہ اگر دونوں کھلاڑیوں کو 17 دسمبر سے شروع ہونے والی ٹسٹ سیریز میں حصہ لینا ہے تو انہیں 26 نومبر تک آسٹریلیا پہنچنا ہوگا۔ شاستری کے اس بیان کے چند روز بعد ہی یہ خبر سامنے آئی ہے کہ روہت اور ایشانت پہلے دو ٹسٹوں سے باہر ہوگئے ہیں۔ ان کا باقی دو ٹسٹوں میں حصہ لینا ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) کی فوری کارروائی پر منحصر ہوگا۔ ایشانت نے حالانکہ گیندبازی فٹ نیس حاصل کرلی ہے لیکن ٹسٹ فٹ نیس کے لئے انہیں چار ہفتے پوری گیندبازی کی ضرورت ہوگی یعنی ایک دن میں کم از کم 20 اوور۔ روہت کا ابھی کوئی فٹ نیس ٹسٹ نہیں ہوا ہے جبکہ انہوں نے آئی پی ایل کے فائنل میں اپنی ٹیم کے لئے میچ فاتح نصف سنچری بنائی تھی۔

اس سے قبل روہت کو آسٹریلیا کے دورے سے باہر کردیا گیا تھا لیکن آئی پی ایل میں اپنی ٹیم کے فائنل سمیت آخری تین میچوں میں کھیلنے کے بعد انہیں اپنی فٹنس سے متعلق سوالات کے بعد بی سی سی آئی نے روہت کو ون ڈے اور ٹی ٹونٹی سیریز سے آرام دیا تھا لیکن انہیں چار ٹیسٹوں کی سیریز میں شامل کرلیا تھا۔ ایشانت آئی پی ایل کے بیچ میں واپس سیدھے این سی اے چلے گئے تھے۔ انہوں نے حال ہی میں پورے رن اپ کے ساتھ اپنی گیندبازی ٹسٹ دیا تھا۔ لیکن تیسرے ٹیسٹ میں کھیلنے کے لئے انہیں ابھی آسٹریلیا کے لئے فلائٹ پکڑنی ہوگی۔ آسٹریلیا کے کوارنٹین ضابطوں کے مطابق ایشانت کو آسٹریلیا پہنچنے کے بعد 14 دن تک الگ تھلگ رہنا ہوگا اور وہ دو ہفتوں کے بعد ٹریننگ شروع کرسکیں گے۔ وہ سڈنی میں7 جنوری سے شروع ہونے والے تیسرے ٹیسٹ کے لئے ہی تیار ہوسکیں گے۔

سمجھا جارہا ہے کہ روہت کو دسمبر کے دوسرے ہفتے میں سفر کی اجازت مل سکے گی۔ اس کے بعد انہیں دو ہفتوں کے ری ہیبلی ٹیشن سے گزرنا ہوگا جس کے بعد ان کے سلسلے میں کوئی حتمی فیصلہ کیا جاسکتا ہے۔ بی سی سی آئی کے ایک اہلکار کے مطابق، اگر روہت کے پاس ٹسٹ سیریز میں کھیلنے کا موقع ہوسکتا تھا اگر وہ دیگر ٹیم ساتھویں کے ساتھ سیدھے دبئی سے آسٹریلیا کے لئے روانہ ہوجاتے۔ روہت اگر سیدھے آسٹریلیا کے لئے روانہ ہونا چاہتے ہیں تو وہ آٹھ دسمبر تک روانہ ہوسکتے ہیں۔ انہیں آسٹریلیا پہنچنے پر 14 دن کوارنٹین میں رہنا ہوگا جس میں وہ کم از کم 22 دسمبر تک ٹریننگ سے باہر رہیں گے۔

اگر دونوں کھلاڑی اگلے ایک یا دو دن میں آسٹریلیا کے لئے روانہ ہوتے ہیں تو، انہیں آسٹریلیا پہنچنے کے بعد 14 دن تک اپنے ہوٹل کے کمروں میں الگ تھلگ رہنا ہوگا۔ اس کا مطلب ہے کہ وہ ایڈیلیڈ میں 17 دسمبر سے شروع ہونے والے ڈے۔نائٹ ٹیسٹ سے قبل پہلے دو پریکٹس میچوں میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔ اگر روہت آؤٹ ہوتے ہیں تو، شریس ایر کو ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا جا سکتا ہے جو آسٹریلیا میں محدود اوورز کی ٹیم کا حصہ ہیں۔ دوسری طرف ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی (Virat Kohli) پہلے ٹسٹ کے بعد ملک لوٹ آئیں گے، وہ اپنے بچے کی پیدائش کی وجہ سے اہلیہ انوشکا شرما (Anushka Sharma) کے پاس رہنا چاہیں گے۔ کوہلی کی عدم موجودگی میں ہندوستانی ٹیم کے لئے حالات کتنے مشکل ہو سکتے ہیں یہ دیکھنے والی بات ہے۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close