اپنا دیشتازہ ترین خبریں

ارنب-کنگنا کے خلاف آواز اٹھانے کا شاخسانہ، شیوسینا لیڈر کے گھر-دفتر پر ای ڈی کا چھاپہ

ممبئی: (یو این آئی)
رپبلک ٹی وی (Republic Tv) کے سربراہ ارنب گوسوامی (Arnab Goswami) اور مہاراشٹرا کی ریاستی حکومت کو نشانہ بنانے والی فلم اراکارہ کنگا رناؤت (Kangana Ranaut) کے خلاف آواز اٹھانے والے شیوسینا (Shiv Sena) رکن اسمبلی پرتاپ سرنائک کے گھر اور دفاتر پر آج صبح مرکزی ایجنسی ای ڈی (ED) نے چھاپہ مارا۔ ممبئی اور تھانہ میں جملہ 9 مختلف مقامات پر مارے گئے چھاپے کو "انتقامی کاروائی” سے تعبیر کرتے ہوئے شیو سینا اور ریاستی مہا وکاس اگھاڑی حکومت کی حلیف جماعتیں این سی پی اور کانگریس نے اس واقعہ کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) کو مرکزی حکومت کی ایک کٹ پتلی قرار دیا ہے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ منی لانڈرنگ کی روک تھام کے قانون (پی ایم ایل اے) کے تحت ممبئی اور تھانہ کے مقامات پر بیک وقت چھاپے مارے گیے واضح رہے کہ، تھانہ کے اؤلا- ماجیواڑا حلقہ سے ایم ایل اے تین بار منتخب ہو چکے 56 سالہ پرتاپ سرنائک مختلف شعبوں میں دلچسپی رکھنے والے ویہنگ گروپ آف کمپنیوں کے چیئرمین ہیں۔ ای ڈی کی ٹیموں نے سرنائک کے تھانے کے گھر پر ایک سرکردہ ایجنسی سمیت کچھ دیگر مقامات پر یہ چھاپے اس مارے جب پرتاپ سرنائک وہاں موجود نہیں تھے۔ عیاں رہے کہ پچھلے چند ہفتوں میں پرتاپ سرنائک نے بالی ووڈ اداکارہ کنگنا رنوت اور ریپبلک ٹی وی کے چیف ایڈیٹر ارنب گوسوامی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا، اور ممبئی کو پاکستان مقبوضہ کشمیر سے تعبیر کرنے پررنوت کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔

انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) کی اس کاروائی کا سخت نوٹس لیتے ہوئے حکمراں شیوسینا-نیشنلسٹ کانگریس پارٹی اور کانگریس نے اس کاروائی کو مہاراشٹرا کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت پر دباؤ ڈالنے اور اس کے رہنماؤں کو نشانہ بنانے کے لئے مرکزی ایجنسیوں کو استعمال کرنے کا الزام لگاتے ہوئے مرکزی حکومت اور بی جے پی کو ہدف تنقید بناتے ہوئے شدید لفظوں میں مذمت کی ہے۔

شیوسینا کے ترجمان اعلیٰ سنجے راؤت (Sanjay Raut) نے مخالفین کے خلاف چھاپوں کو سیاسی ہتھیار کے طور پر استعمال کرنے کا الزام لگاتے ہوئے پر مرکزی حکومت پر حملہ کیا۔ "ہم سب جانتے ہیں کہ ای ڈی اور سی بی آئی کا غلط استعمال ہو رہا ہے… وہ مرکز کے ہاتھوں میں کٹھ پتلی ہیں۔ لیکن، ہم کسی کے سامنے سر نہیں جھکائیں گے۔” انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ مہاراشٹرا کی مہا وکاس اگھاڑی حکومت مستحکم ہے اور وہ اپنی چار سال کی باقی مدت پوری کرے گی۔ اس کے ساتھ ہی، انہوں نے متنبہ کیا کہ شیوسینا کے پاس بھی بی جے پی قائدین کے تمام مذموم معاملات کی فائلیں موجود ہیں۔

این سی پی کے سینئر رہنما اور فوڈ اینڈ سول سپلائی منسٹر چھگن بھجبل نے کہا کہ بی جے پی مرکزی ایجنسیوں کو ان لوگوں کو ہراساں کرنے کے لئے استعمال کرتی ہے جو ان پر تنقید کرتے ہیں۔ "پہلے انہوں نے (این سی پی صدر) شرد پوار کو گذشتہ سال ایک نوٹس کے ساتھ نشانہ بنایا اور پھر راجستھان، مہاراشٹر یا دیگر ریاستوں میں حزب اختلاف کی پارٹی کے بہت سے دیگر رہنماؤں کو، لیکن وہ کبھی بھی اپنے ارادوں میں کامیاب نہیں ہوں گے”۔

کانگریس کے ریاستی صدر اور وزیر محصول بالاصاحب تھورات نے یہ کہتے ہوئے بی جے پی کو نشانہ بنایاکہ "دباؤ بنانے کے لئے تمام مرکزی ایجنسیوں کو سیاسی فائدے کے لئے غلط استعمال کیا جارہا ہے۔”بی جے پی مسلسل اس طرح کے سیاسی مخالفین کو نشانہ بناتی رہی ہے، کیا آپ نے کبھی بی جے پی سے وابستہ لوگوں پر کسی چھاپے کے بارے میں سنا ہے؟۔”

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close