اپنا دیشتازہ ترین خبریں

آئندہ کچھ ہفتوں میں کورونا کا ٹیکہ تیار ہوجائے گا: پی ایم مودی

نئی دہلی، (یو این آئی)
وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ کورونا ویکسین اگلے کچھ ہفتوں میں تیار ہوجائے گی اور اس کے تیار ہونے کے بعد ملک میں ٹیکہ کاری کا کام شروع ہو جائے گا۔ پی ایم مودی نے کہاکہ کورونا ویکسین کی قیمت کا تعین عوامی صحت کو ترجیحات تسلیم کرکے ریاستوں کے ساتھ غور وخوض کی بنیاد پر کیا جائے گا۔

وزیراعظم نریندر مودی نے آج یہاں سبھی سیاسی پارٹیوں کے ساتھ ملک میں کورونا وبا سے پیدا صورتحال پر تبادلہ خیال کے لئے طلب کی گئی میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ پی ایم نے کہا کہ ماہرین اور سائنس دانوں سے ہوئی بات چیت کی بنیاد پر یہ کہا جارہا ہے ملک میں آئندہ کچھ ہفتوں میں کورونا کی ویکسین تیار ہوجائے گی۔ ویکسین آنے کے بعد ملک میں اس کی ٹیکہ کاری کا کام شروع کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ایک اور سوال سب کی ذہنوں میں ہے کہ ویکسین کی قیمت کیا ہوگی۔ انہوں نے کاہکہ اس کی قیمت کا تعین عوام صحت کو اولین ترجیح سمجھتے ہوئے کیا جائے گا۔ اس کے لئے مرکزی حکومت ریاستوں کے ساتھ بات کررہی ہے اور ان کی صلاح کو بھی ان میں ترجیح دی جائے گی۔

مسٹر مودی نے کہا کہ انہوں نے خود ہی ویکسین بنانے والے سائنسدانوں کی ٹیم سے بات کی ہے اور سائنسی کامیابی کے سلسلے میں بہت پراعتماد ہیں۔ سستی اور محفوظ ویکسین کے معاملے میں پوری دنیا ہندوستان پر نظر لگائے ہوئے ہے۔ انہوں نے کہا کہ سب لوگ تیار بیٹھے ہیں۔ اس طرح کے تقریبا آٹھ ممکنہ ویکسین ہیں جو آزمائش کے مختلف مراحل میں ہیں اور انہیں ہندوستان میں تیار کرنا ہے۔

ہندوستان کی اپنی 3 مختلف ویکسینوں کی آزمائش مختلف مراحل میں ہے۔ ماہرین یہ مان رہے ہیں کہ اب کورونا ویکسین کا زیادہ انتظار نہیں ہوگا۔ ممکن ہے کہ آئندہ چند ہفتوں میں کورونا ویکسین تیار ہوجائے گی۔ جیسے ہی سائنسدانوں کی طرف سے ہری جھنڈی ملے گی ہندوستان میں ویکسینیشن کی مہم شروع کردی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی حکومت اس کے بارے میں ریاستی حکومتوں کی طرف سے موصول تجاویز کی بنیاد پر کام کر رہی ہے۔ ویکسینیشن کے لئے سب سے پہلی ترجیح کورونا مریضوں کے علاج کر رہے فرنٹ فرنٹ کے کارکنوں اور پہلے سے سنگین بیماریوں میں مبتلا بزرگ افراد اور ہیلتھ کارکنوں کو ترجیح دی جائے گی۔

مرکزی اور ریاستی حکومت کی ٹیمیں بھی مل کر اس کی تقسیم پر کام کر رہی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ہندوستان کے پاس بھی دنیا کے دوسرے ممالک کی نسبت ویکسین کی تقسیم اوراہلیت بہت بہتر ہے۔ ملک میں بھی ویکسینیشن کے لئے ایک بہت بڑا اور تجربہ کار نیٹ ورک ہے۔ مسٹر مودی نے بتایاکہ کولڈ اسٹوریج اور دیگر سازوسامان کی ضروریات کے علاوہ ریاستی حکومتوں کی مدد سے بھی اس کا اندازہ کیا جارہا ہے۔ کولڈ اسٹور ہاؤس چین کو مزید مستحکم کرنے کے لئے ایک ساتھ کام کیا جارہا ہے۔ مسٹر مودی نے بتایا کہ ہندوستان نے ایک خصوصی سافٹ ویئر کوون بھی تیار کیا ہے جس میں کورونا ویکسین کے فائدہ اٹھانے والوں، ویکسین کے دستیاب اسٹاک اور اسٹوریج سے متعلق ‘ریئل ٹائم’ کی جانکاری ہوگی۔

کورونا ویکسین سے متعلق تحقیق کرنے کے لئے ملک میں ایک خصوصی ٹاسک فورس تشکیل دی گئی تھی۔ ساتھ ہی ویکسین سے متعلق مہم کی ذمہ داری قومی ماہرین کےایک گروپ کو دی گئی ہے۔ اس میں تکنیکی ماہرین ، مرکزی حکومت سے متعلق وزارتوں اور محکموں کے عہدیدار اور ہر زون کے مطابق ریاستی حکومتوں کے نمائندے ہیں۔ یہ گروپ ریاستی حکومتوں کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔ نیشنل اور مقامی ہر ضرورت کے مطابق اجتماعی طور پر فیصلے کریں گے۔ وزیر اعظم نے بتایا کہ ’’یہ سوال فطری ہے کہ ویکسین کی قیمت کتنی ہوگی۔ مرکزی حکومت اس بارے میں ریاستی حکومتوں سے بات کر رہی ہے۔ ویکسین کی قیمت کے بارے میں فیصلہ عوام کی صحت کو سب سے زیادہ ترجیح دیئے جانے کے ساتھ ہی کیا جائے گا اور ریاستی حکومتوں کی بھی اس میں بھرپور شراکت داری ہوگی۔‘‘

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close