اپنا دیشتازہ ترین خبریں

راجیو شرما ڈیجیٹل ذارئع سے بھیج رہا تھا خفیہ فوجی معلومات، لیپ ٹاپ-موبائل کی ہو رہی ہے ڈاٹا ریکووری

پولیس نے برآمد کیا ملزم کا لیپ ٹاپ اور موبائل، کی جا رہی ڈاٹا ریکووری، چینی خفیہ ایجنسیوں کو ڈیجیٹل ذارئع سے بھیج رہا تھا خفیہ فوجی معلومات  

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
ہندوستان کے دشمن ملک چین کیلئے جاسوسی کرتے ہوئے ملک کی دفائی خفیہ معلومات مہیا کرانے کے الزام میں گرفتار غدار وطن آزاد صحافی راجیو شرما کے لیپ ٹاپ اور موبائل سے اس کی ملک کے خلاف کی گئی سازشوں کے تمام راز فاش ہوں گے۔ پولیس نے راجیو کا لیپ ٹاپ اور موبائل فون برامد کرلیا ہے جس کی ڈاٹا ریکووری کی جا رہی ہے۔

چین کیلئے جاسوسی کر رہا راجیو شرما ڈیجیٹل ذرائع سے ملک کی دفائی معلومات چینی خفیہ ایجنسوں کے ایجنٹوں تک پہنچا رہا تھا، تفتیش میں اس نے کئی چینی ایجنٹوں کے نام بھی بتائے ہیں۔ راجیو شرما کا لیپ ٹاپ اور موبائل پولیس نے برامد کر لیا ہے۔ فرانسک ماہرین لیپ ٹاپ اور موبائلوں سے بھیجے اور ڈیلیٹ کئے گئے ڈاٹا کو جمع کرکے یہ جاننے کی کوشش کر رہے ہیں کہ چینی خفیہ ایجنسیوں کو کون کون سی خفیہ معلومات شیئر کی گئی ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ ملک سے غداری کرتے ہوئے چین کیلئے جاسوسی کرکے ملکی دفائی معلومات مہیا کرانے والے راجیو شرما کے ساتھ ایک خاتون چینی ایجنٹ کوینگ شی اور ایک نیپالی شہری شیر سنگھ کو بھی پولیس نے گرفتار کیا تھا۔ چینی خاتون اور نیپالی سے پکڑے گئے موبائل، لیپ ٹاپ، ٹیب اور دیگر دستاویزات کی بھی تفتیش کی جا رہی ہے۔ پولیس کو تفتیش میں یہ معلوم ہوا ہے کہ بھارت اور چین سرحد پر جاری کشیدگی کے بعد راجیو شرما پر دباؤ تھا کہ وہ ہندوستانی فوج کی نقل وحرکت اور فوج کی دفائی حکمت عملی کے بارے میں زیادہ سے زیادہ معلومات جمع کرکے چینی خفیہ ایجنسی کو دے۔ راجیو نے فوج کی بہت سی اہم دفائی معلومات چین کو پہنچائی بھی ہیں۔ ایسی صورتحال میں اسپیشل سیل کی ٹیم یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ اس نے اب تک کیا کیا اہم خفیہ معلومات چین کی خفیہ اجنسیوں تک پہنچائی ہیں۔

دہلی پولیس کے اعلی افسران کے مطابق تفتیش میں چینی خاتون کو ینگ شی نے انکشاف کیا ہے کہ وہ تعلیم کے بہانے 2013 میں ہندوستان آئی تھی اور اس نے یہاں جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی میں داخلہ لیا۔ اس کے بعد وہ ہندوستان میں ہی قیام پذیر رہی۔ لیکن چین بھی آتی جاتی رہی۔ تفتیش میں اس نے بتایا کہ چینی شہری جوانگ چانگ اور ان کی بیوی چانگ لیلیا نے دہلی کے مہیپال پور میں سورج اور اوشا کے نام سے دو جعلی کمپنیاں ایم زیڈ فارمیسی اور ایم زیڈ مالز بنائیں۔ دونوں دکھاوے کیلئے دوائیں چین میں برآمد کرانے کا بہانہ کرتے تھے، بعد میں وہ چین لوٹ گئے۔

کوینگ شی نے پولیس کو بتایا ہے کہ چینی خفیہ ایجنٹوں نے ان لوگوں سے کو ینگ شی اور شیر سنگھ کو کمپنی کا ڈائریکٹر بنانے کے لئے کہا۔ تب سے ہم دونوں جعلی کمپنی کے ڈائریکٹر تھے۔ کوینگ شی نے یہ بھی بتایا ہے کہ ان کا کام دونوں کمپنیوں کے کھاتوں میں آئی رقم کو راجیو شرما کے اکاؤنٹ میں ٹرانسفر کرنا تھا۔ چینی خفیہ ایجنٹوں نے بڑی رقم کا لالچ دیکر شیر سنگھ کو بھی اپنے ساتھ ملایا ہوا تھا۔ بہت سی ہندوستان کی اہم خفیہ دفائی معلومات چین کی خفیہ ایجنسیوں تک پہنچائی جا چکی ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close