تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

جنتر منتر پر پولیس نے روکا کسانوں کا دھرنا

دہلی، یوپی اور ہریانہ کی سرحدوں پر روکے گئے کسان، آل انڈیا کسان سنگھرش کوآرڈینیشن کمیٹی کے تحت تھا دھرنا

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
مختلف مطالبات اور تینوں آرڈیننس کے خلاف آل انڈیا کسان سنگھرش کوآرڈینیشن کمیٹی کے تحت دہلی کے جنتر منتر پر منعقدہ ھرنا پولیس نے ختم کرا دیا۔ آج صبح دہلی کے جنتر منتر پر آل انڈیا کسان سنگھرش کوآرڈینیشن کمیٹی کی قیادت میں کسانوں کا مظاہرہ شروع تو ہوا لیکن دپہر ہوتے ہوتے اس کو ختم کرا دیا گیا، اس مظاہرے میں یوگیندر یادو سمیت 20 سے زیادہ کسان لیڈر موجود تھے۔ وہیں دہلی یوپی، ہریانہ بارڈر سے آنے والے کسانوں کو بالترتیب یوپی گیٹ اور نریلا بارڈر پر روک دیا گیا ہے۔ تینوں آرڈیننس کے خلاف احتجاج کرنے دہلی پہنچ رہے دونوں ریاستوں کے کسانوں کی ایک بڑی تعداد نے دہلی کا رخ کیا، لیکن پولیس نے سرحد کو سیل کردیا اور انہیں آگے بڑھنے سے روک دیا گیا۔ تینوں آرڈیننسز کے خلاف احتجاج کرنے دہلی جا رہے بھارتیہ کسان یونین کے کسانوں کو روکنے پر کسان یوپی گیٹ پر ہی دھر نے پر بیٹھ گئے۔ بڑی تعداد میں کسانوں کی موجودگی پر یہاں بھاری پولیس فورس تعینات کی گئی۔

بھارتیہ کسان یونین کے قومی ترجمان راکیش ٹکیت نے دہلی پولیس کے مدھو وہار ڈویزن کے اے سی پی وجے سنگھ کو میمورنڈم پیش کیا۔ راکیش ٹکیت نے کہا کہ حکومت نے ہمارے مطالبات کا ایک میمورنڈم طلب کیا ہے۔ میمورنڈم دینے کیلئے بھارتی کسان یو نین کا ایک وفد دہلی جائے گا اور وزیر زراعت کو میمورنڈم پیش کریں گے۔ اس کے بعد یوپی گیٹ سے کسانوں کو دھرنا اٹھایا جائے گا۔

دریں اثنا کسانوں کے دھر نے کے چلتے دہلی، میرٹھ ایکسپریس وے کے کسانوں نے کسان کلیان سنگھرش سمیتی کی قیادت میں یکساں معاوضے اور سروس روڈ سمیت مختلف مطالبات کیلئے بھوج پور کے پرتھم گڑھ گاؤں سے نیم برہنہ ہو کر مارچ کا آغاز کیا، جو شام کو کلسیہ رکے گا، جہاں سے منگل کی صبح کو روانہ ہوگا اور بدھ کے روز کسان اپنے مطالبات کے سلسلے میں کلکٹریٹ پر غیر معینہ مدت دھرنا دیں گے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close