اترپردیش

عوام بی جی پی کے مکروفریب سے عاجز آچکی ہے: مولانا جاوید عابدی

امروہہ پہنچے نوگاواں سے سماج وادی امیدوار مولانا جاوید عابدی کا اتحادی لیڈران و کارکنان نے کیا پرتپاک استقبال محبوب علی کمال اختر اور آر ایل ڈی و مہان دل لیڈران کے ساتھ امروہہ میں پریس کانفرنس سے کیا خطاب، بی ایس پی امیدوار پر لگایا بی جی پی سے سانٹھ گانٹھ کا الزام

امروہہ، (سالار غازی) 
ضلع امروہہ کی نوگاواں اسمبلی نشست پر ہو رہے ضمنی انتخاب کے لئے سماج وادی پارٹی کے امیدوار قدآور لیڈر و قومی سکریٹری اور اکھلیش یادو کے بیحد قریبی مولانا جاوید عابدی امیدوار نامزد ہونے کے بعد پہلی مرتبہ نوگاواں پہنچ نوگاواں سے قبل دہلی سے آمد کے دوران ضلع سرحد پر سماج وادی پارٹی و راشٹریہ لوک دل اور مہان دل لیڈران و کارکنان نے اتحادی امیدوار کا پرتپاک استقبال کیا.

جس کے بعد مختلف جگہوں پر مولانا جاوید عابدی کی گل پوشی و استقبال اتحاد جماعتوں کے لیڈران و کارکنان نے کی مولانا جاوید عابدی و اتحادی لیڈران نے رجبپر واقعے درگاہ بابا فریدی پر چادر پوشی کی جسکے بعد امروہہ نوگاواں روڈ پر قائم ایک کمیونٹی حال میں سماجوادی امیدوار نے پارٹی کے قدآور لیڈران سابق کابینہ وزیر محبوب علی و کمال اختر کے علاوہ اتحادی جماعتوں راشٹریہ لوک دل و مہان دل کے ضلع سطحی لیڈران کے ساتھ میڈیا نمائندگان سے گفتگو کی اس دوران مولانا جاوید عابدی نے اپنے اغراض و مقاصد بیان کرتے ہویے کہا کہ سماج وادی پارٹی ترقیاتی سیاست میں یقین رکھتی ہے جبکہ صوبہ کی ترقی گزشتہ چار سال سے جام ہے لہٰذا حلقہ نوگاواں میں گزشتہ تقریبا چار سال سے رکی ترقی کی گاڑی کو آگے بڑھانے کے لئے انتخابی میدان میں اتارا گیا ہوں.

انہوں نے کہاکہ ہم نے پچھلی سرکار کے دوران ثابت کیا ہے کہ ہم حلقہ کی ترقی چاہتے ہیں حلقہ میں ضروری کام بڑے پیمانہ پر سماج وادی سرکار کے دوران کئے گیے جو سب عوام کے سامنے ہے مولانا عابدی نے بی جی پی پر حملہ زن ہوتے کہا کہ بی جی پی ذات مذھب کے درمیان نفاق و سماج میں نفرت کا بیج بونے کا کام کر رہی ہے بولے کسان مزدور عام آدمی نوجوان ہر طبقہ آج اپنے حقوق کے لئے سرکار کے خلاف مورچہ بند ہے عوام بی جی پی کی مکر و فریب اور جھانسے دار سیاست سے عاجز آچکی ہے بولے موجودہ سرکار نے صوبہ میں جنگل راج کر دیا ہے جرائم پیشہ افراد کھلے عام گھوم رہے اور قانونی نظام مکمل طور پر درہم برہم ہے خواتین غیر محفوظ ہیں بولے کسان 6 سال سے مودی کے جھوٹھے وعدوں کی تکمیل کا انتظار کر رہا ہے. مولانا عابدی نے کہا کہ سماج وادی پارٹی ترقیاتی سیاست کو فروغ دینا چاہتی ہے بولے اکھلیش یادو کی قیادت والی گزشتہ حکومت کے دوران صوبہ میں جو ترقیاتی کام ہویے وہ ہمارے دعووں کی زندہ دلیل ہے عوام آج ایک مرتبہ پھر بڑی امید بھری نظروں سے سماج وادی پارٹی اور اکھلیش یادو کی طرف دیکھ رہے ہے

صحافیوں کے ذریعے اتحادی جماعتوں کو بیساکھی بولنے پر مولانا عابدی نے کہاکہ ہمارے اتحادی بیساکھی نہیں ہتھیار ہیں جنگ جیتنے کے لئے ہتھیاروں کا استمعال کیا جاتا ہے بیساکھیوں کا نہیں بی ایس پی سے متعلق ایک سوال کے جواب میں سماج وادی امیدوار نے کہا کہ اپنی سربراہ کی طرح نوگاواں سے بی ایس پی امیدوار بھی بی جی پی کا ہی معاون ہے ضلع پنچایت میں وہ کئی مرتبہ بی جی پی کو حمایت کر چکا ہے اس موقع پر سابق کابینہ وزیر و سماجوادی پارٹی کے قدآور لیڈر محبوب علی و کمال اختر کے علاوہ ضلع صدر سماج وادی نرموج یادو ضلع صدر راشٹریہ لوک دل ضلع صدر مہان دل و اتحادی جماعتوں کے لیڈران کثیر تعداد میں موجود رہے.

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close