تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

’حج کی ادائیگی کو انکم ٹیکس سے مستثنیٰ رکھا جائے‘

مفتی مکرم نے بابری مسجد معاملے میں سی بی آئی عدالت کے فیصلے کو بتایا افسوسناک

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
شاہی فتح پوری مسجد کے امام ڈاکٹر مفتی مکرم احمد نے بابری مسجد انہدام معاملے میں سی بی آئی عدالت کے فیصلے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ وہیں انہوں نے حج بیت اللہ کے فریضہ کی ادائیگی میں انکم ٹیکس ریٹرن جمع کرنے کی لازمیت کو ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

آج شاہی فتح پوری مسجد میں نماز جمعہ سے قبل خطاب کرتے ہوئے مفتی مکرم نے کہاکہ بابری مسجد انہدام مقدمہ میں 28 سال کے انتظار کے بعد خصوصی عدالت نے جو فیصلہ سنایا ہے وہ حیران کن اور افسوسناک ہے۔ شواہد کو نظر انداز کر دیا گیا اور مقدمہ بنانے والوں نے بھی اس میں خامیاں چھوڑی ہوں گی، جن کا فائدہ تمام ملزمان کو ملا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دوسری طرف متھرا کی عدالت نے کچھ لوگوں کی درخواست کو مسترد کر دیا یہ ایک اچھی خبر ہے۔ مفتی مکرم نے کہا کہ کچھ لوگ متھرا کی عیدگاہ پر بابری مسجد کی طرح فتنہ کرنا چاہتے تھے۔ انہوں نے کہاکہ اگر 1991 کے مذہبی مقامات ایکٹ پر غیر جانبداری سے عمل کیا جائے تو یہ فتنہ خود ہی ختم ہو جائے گا سب کو 1991 ایکٹ کا احترام کرنا چاہئے۔

مولانا مفتی مکرم نے فریضہ حج کی ادائیگی کیلئے انکم ٹیکس ریٹرن جمع کرانے کی لازمیت کو ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ عازمین حج کی آمدنی پر کسی طرح کی نئی شرط نہ لگائی جائے اور جیساکہ ستر سال سے چلا آ رہا ہے اسی طرح پر آگے بھی اس عمل کو جاری رکھا جائے اور حج کو ٹیکس کے قانون سے مستثنی رکھا جائے۔ کیوںکہ حاجی فریضہ حج کی ادائیگی کیلئے زندگی بھر تھوڑا تھوڑا پیسہ جوڑتا ہے، وہ اس کا انکم ٹیکس ریٹرن کہاں سے جمع کرے گا۔ اس لئے یہ ختم ہونا چاہئے۔

یہ بھی پڑھیں………حج پر جانا اب نہیں ہوگا آسان، عازمین کو جمع کرنا ہوگا انکم ٹیکس ریٹرن

مفتی مکرم نے مرکزی حکومت سے اپیل کی کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی کے 100 سال مکمل ہونے پر خصوصی پیکج دیا جائے۔ جیسا کہ کچھ سال قبل بنارس ہندو یونیورسٹی کو 100 سال مکمل ہونے پر خصوصی عطیہ دیا گیا تھا۔خوشی کی بات یہ ہے کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ نے دنیا بھر میں نام کمایا ہے اور حال ہی میں مرکزی حکومت کے سروے میں اسے پہلا مقام ملا ہے۔ جامعہ میں میڈکل کورسز کی بھی 2021 آنے والے سیشن سے ہی منظوری دی جائے اور وائس چانسلر کے تمام مطالبات پر ہمدردانہ غور کیا جائے۔ مفتی محمد مکرم نے اپنے خطاب میں کہا حضورؐ کے فرمان کے مطابق مومن کا نیکی سے کبھی پیٹ نہیں بھرتا یہاں تک کہ وہ جنت تک پہنچ جاتا ہے نیکی کرنا اور دوسروں کو نیک کاموں کی طرف لگانا ثواب کی بات ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close