دلی این سی آر

کسان بل کے خلاف کانگریسی کارکنان کا راج گھاٹ پر احتجاج

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
مرکزی بی جے پی حکومت کے ذریعہ پارلیمنٹ میں بغیر کسی بحث کے زراعت سے متعلق تین بلوں کی منظوری کے خلاف ملک بھر میں احتجاج کیا جا رہا ہے۔ اسی سلسلے میں پرانی دہلی سے تعلق رکھنے والے کانگریس ی لیڈران و کا رکنان نے آج راج گھاٹ پر احتجاج کیا اور کسان بل کے خلاف دھرنا دیا۔ سابق میونسپل کو نسلر اشوک جین کی قیادت میں کانگریسیوں نے مرکزی حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور مرکزی حکومت کو کسان اور تاجر مخالف کہا۔

اس موقع پر اشوک جین نے تینوں بلوں پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت نے کسانوں کے اعتراضات کو نظرانداز کرتے ہوئے اور حزب اختلاف کی آواز کو دبانے کے ساتھ، راجیہ سبھا میں تمام حدود کو مدنظر رکھتے ہوئے، ووٹوں کے بغیر یہ بل منظور کیا ہے۔ اشوک جین نے کہاکہ حکومت کا یہ اقدام انتہائی افسوس ناک ہے اور یہ بل غیر قانونی اور غیر آئینی ہے۔ اسی وجہ سے صدر جمہوریہ کوان بلوں کو واپس بھیجنا چاہئے۔

انہوں نے صدرجمہوریہ ہند سے مطالبہ کیا کہ وہ ان بلوں پر دستخط نہ کریں اور کسانون کو آنے والی پریشانی سے بچائیں کیوں کہ کسان اس ملک کے ’ان داتا‘ ہیں۔ اس موقع پر پورن چند بھگت، عباد الحق (بادوبھائی)، دیش راج شرما، بشیر الدین تیل والے وغیرہ سمیت کثیر تعداد میں پرا نی دہلی کے کا نگریسی کا رکنان موجود تھے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close