اپنا دیشتازہ ترین خبریں

پجاری قتل معاملہ: اشوک گہلوت کا اہل خانہ کو معاوضہ دینے کا اعلان

جے پور، (یو این آئی)
راجستھان میں کرولی ضلع کے سپوٹرا علاقے میں مندر کے پجاری بابولال ویشنو کو جلاکر قتل کر دینے کے بعد سے ہی سیاست کافی گرمائی ہوئی ہے. معاملے کی اعلیٰ سطحٰ جانچ کرانے اور اہل خانہ کو معاوضہ دینے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ گھر والے اپنے مطالبات کے ساتھ دھرنا دے کر ان کی آخری رسومات نہ کرنے پر بضد ہیں وہیں انتظامیہ اور پولیس انہیں سمجھانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ لیکن اس دوران اشوک گہلوت حکومت نے معاوضہ کا اعلان کیا ایس ایچ او کو معطل کردیا۔

یاد رہے کہ میڈیا رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ کرولی ضلع کے سپوٹرا تھانہ کی گرام پنچایت بھکنا میں پیش آیا۔ یہاں پر واقعہ ایک مندر میں 50 سالہ بابو لال ویشناو پوجا کرتا تھا اور مند کی زمین پر بھی اسی کا قبضہ تھا۔ لیکن زمین پر گاؤں کے ہی دبنگ کیلاش مینا کی نظر تھی۔ اسی زمین پر قبضہ کرنے کے لئے ملزم کیلاش مینا نے مبینہ طور پر پجاری پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔ اس معاملہ کو لے کر راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوگ نے بھی افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ اس معاملہ میں کسی بھی قصوروار کو بخشا نہیں جائے گا۔

بتا دیں کہ گھر والے اپنے مطالبات کے ساتھ دھرنا دے کر ان کی آخری رسومات نہ کرنے پر بضد تھے، وہیں انتظامیہ اور پولیس انہیں سمجھانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ موصول اطلاع کے مطابق دھرنے میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کے رکن پارلیمنٹ کروڑی لال مینا بھی ان کے ساتھ ہیں۔ بی جےپی کی اس معاملے میں تشکیل تین رکنی ریاستی سطحی کمیٹی بھی موقع پر پہنچ گئی ہے اور متاثر کنبے سے ملاقات کرکے معلومات حاصل کی ہے۔ کمیٹی میں شامل رکن پارلیمنٹ رام چرن بوہرا، بی جے پی قومی وزیر الکا گرجر اور پارٹی لیڈر جتیندر مینا نے کنبے کے لوگوں سے بات چیت کی۔

اس موقع پر مسٹر بوہرا نے کہا کہ جےپور میں سرکاری چیف وہپ مہیش جوشی نے کنبے کے مطالبات پر جو یقینی دی گئی تھی اس پر ابھی کوئی کام نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ابھی تک نہ تو تھانے کو برخاست کیا گیا ہے اور نہ ہی متاثر کنبے کو کوئی معاوضہ یا نوکری دینے کی بات سامنے آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سنجیدہ ہوکر متاثر کنبے کی مدد کرے، انہیں معاوضہ اور نوکری اور ان کی حفاظت کا انتظام کیا جائے اور سبھی ملزمین کو فوراً گرفتار کرکے سخت سزا دینے کا مطالبہ حکومت سے کیا گیا ہے۔ ایک وفد کی انتظامیہ اور پولیس کے ساتھ بوکنا اسکول میں پہلے دور کی بات چیت ہوئی لیکن اس میں کوئی مثبت نتیجہ نہیں نکلا اور دوسرے دور کی بات چیت چل رہی ہے۔ وفد نے متاثرہ کنبے کو معاشی مدد، سرکاری نوکری، مکان کا پٹا، کنبے کو حفاظت اور ملزمین کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close