ہمارے بارے میں

آخر کیوں!

2012میں انٹر نیشنل انگریزی عرب نیوز کی ادارت چھوڑ کر ہندوستان آیا تھا کہ اپنے ملک ،اپنی قوم اور اپنی زبان کی خدمت کروں۔ چنانچہ ملک کے سب سے بڑے میڈیا گروپ کے اصرار پر گروپ ایڈیٹرکا عہدہ سنبھالا مگر 5سال کے اس صحافتی دور میں یہی تجربہ ہوا کہ ملک ،قوم اور زبان سب پر  ایک خاص فکر تھوپنے کی سعی ہو رہی ہے ،میڈیا پورے طور پر کاروباری ،بازاری بلکہ اشتہاری ہو چکا ہے ،صحافت کی دنیا میں ہر ذہن ،ہر قلم غلام بنایا جا رہا ہے ،ملک ،قوم ،زبان کی خدمت کے بجائے زعفرانی سیاست کا بھونپو ہو چکا ہے ۔ایسا میڈیا مجھے سوٹ نہیں کرتا ۔میں نئی فکر ،نئی تہذیب اور نئی سیاست کا ترجمان نہیں ہو سکتا اور جب میرے قلم اور میرے ذہن کو پابند بنانے کی کوشش ہوئی تو میں نے اپنی راہ الگ بنالی !

اب آزاد میڈیا ،آزاد سوچ ،آزاد قلم کے ساتھ روز نامہ آپ کی آوازآپ کے سامنے ہے ۔

سچ کا علمبردار،آپ کا اپنا اخبار

 

Close