تازہ ترین خبریںدلی نامہ

’یہ قربانی کی لڑائی ہے، سڑک سے ایوان تک لڑیں گے، ملک تقسیم نہیں ہونے دیں گے‘

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
شہریت ترمیمی قانون، این آر سی، این پی آر کے خلاف بعد نماز جمعہ جامع مسجد کے باہر ہزاروں افراد کے ساتھ احتجاج کر رہی چاندنی چوک سے رکن اسمبلی الکا لامبا نے مودی حکومت اور ’آپ‘ کنوینر اروند کجریوال کو جم کر نشانہ بنایا۔ الکا لامبا نے کہاکہ میں نمازیوں سے کہنا چاہوں گی کہ ہماری آواز کو کچلنے کی سازش ہو رہی ہے، لیکن میں کانگریس کی جانب سے کہنے آئی ہوں مشتعل اور گمراہ مت ہونا، ہمت مت ہارنا، کانگریس تمہارے ساتھ کھڑی ہے۔ سڑک سے ایون تک اس لڑائی کو ہم مل کر لڑیں گے، دہلی میں کانگریس کی حکومت بنتے ہی ایوان میں سی اے اے، این آر سی، این آر پی کو نفاذ نہ کرنے کی تجویز میں پیش کروں گی، ایوان میں اس کالے قانون کے پنے پھاڑ کر پھیکنے کا کام میں الکا لامبا کروں گی۔

کجریوال کو نشانہ بناتے ہوئے الکا لامبا نے کہاکہ آر ایس ایس، بی جے پی نے سارا پیسہ اور طاقت عام آدمی پارٹی پر لگا کر این آر سی، سی اے اے کیلئے خاموش کر دیا ہے، سوال اٹھتا ہے کہ کجریوال جامعہ کے بچوں کو، جے این یو کے بچوں کو دیکھنے کیوں نہیں گئے، شاہین باغ میں ایک مہینے سے دھرنا دے رہی خواتین سے ملنے کیوں نہیں گئے، کیوں وہ شہریت ترمیمی قانون پر نہیں بول رہے ہیں؟۔ انہوں نے کہا کہ میں اپنے نمازی بھائیوں سے کہنا چاہتی ہوں ایک تلاش، ایک سازش ہماری آواز حق کو دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے، گمراہ کیا جا رہا ہے۔ لیکن بیدار رہنا اپنے اندر سی اے اے، این آر سی، این پی آر کی مخالفت کم مت ہونے دینا، گمراہ مت ہونا، کانگریس یہ لڑائی پوری طاقت سے لڑ رہی ہے۔ ہم نے کل بھی قربانی دی تھی اور آج بھی قربانی دینے کو تیار ہیں۔ یہ مرکزی حکومت ہمیں مذہب کے نام پر تقسیم کرنے کی سازش کر رہی ہے، لیکن ہم ان کی سازش کو ناکام بنا دیں گے۔

انہوں نے کجریوال کو نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ کجریوال یہاں کے مسلمانوں کا ووٹ تقسیم کرنے کیلئے ایسے بدعنوان شخص کو ٹکٹ دیا ہے جو 2015 میں یہاں سے ہارا تھا۔ یہاں کے ووٹ بانٹنے کیلئے کجریوال اور بی جے پی میں سمجھوتا ہو چکا ہے۔ میں چاندنی چوک سے نامزدگی داخل کروں گی آپ کا ایک ایک ووٹ مجھے بدعنوانی اور فرقہ پرستوں سے لڑنے کی طاقت دیگا، اپنا ووٹ تقسیم مت ہونے دینا۔ الکا لامبا نے کہاکہ یہ قربانی کی لڑائی ہے اس ملک کے لئے ہم سب ایک ہیں اور ملک کو تقسیم نہیں ہونے دیں گے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close