اترپردیشتازہ ترین خبریں

یوگی آدتیہ ناتھ کو ’رام مندر ٹرسٹ‘ کا صدر بنائے جانے کا مطالبہ

اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد کے صدر نریندر گری نے رام مندر کے بننے والے ٹرسٹ میں اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ اور گورکچھ پیٹھا دھیشور یوگی آدتیہ ناتھ کو بھی شامل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مہنت نے بدھ کو بتایا کہ اجودھیا میں رام جنم بھومی پر سپریم کورٹ کی ہدایت پر دہائیوں پرانے معاملے پر دیا گیا فیصلہ استقبال کے قابل ہے۔ عدالت نے تین مہینے کے اندر مرکزی حکومت کو رام مندر تعمیر کی کاروائی کے لئے کمیٹی کی تشکیل کرنے کا حکم دیا ہے۔ پریشد کے صدر نے کہاکہ رام مندر تحریک میں گورکچھ پیٹھ کے مہنت اور وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے گرو اویدیا ناتھ کا کافی اہم کردار رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوگی آدتیہ ناتھ کو صوبے کے وزیر اعلی کی حیثیت سے نہیں لیکن گورکچھ پیٹھ کے پیٹھا دھیشور کی حیثیت سے مندر ٹرسٹ میں شامل کیا جانا چاہئے۔

اس سے پہلے رام جنم بھومی نیاس کے صدر مہنت نرتیہ گوپال داس نے بھی اس خواہش کا اظہار کیا تھا کہ ایودھیا میں تعمیر ہونے والے رام مندر کے حوالہ سے قائم ہونے والے ٹرسٹ کا صدر یوگی آدتیہ ناتھ کو بنایا جانا چاہیے۔ مہنت نے کہاکہ آدتیہ ناتھ کو گئو رکشک پیٹھ کے مہنت کے طور پر ٹرسٹ کی صدارت کرنی چاہیے نہ کہ وزیر اعلیٰ کے طور پر۔

رام مندر میں سناتن دھرم کے علاوہ کسی دوسرے فرد کو ممبر بنائے جانے پر اعتراض کرتے ہوئے مسٹرگری نے کہاکہ سینکڑوں سال سے زیادہ لمبے جدوجہد کے بعد میں اجودھیا میں رام مندر کا معاملہ حل ہوا ہے۔ ٹرسٹ میں کسی مسلم یا دوسرے مذہب کے افراد کو شامل کرنا مستقبل میں کسی قسم کے تنازع کو جنم دے سکتا ہے۔ پریشد ایسے کسی بھی قدم کی پرزور مخالفت کرے گی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close