تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

ہندووادیوں نے ٹوپی پہنے مسلم نوجوان کی کر دی پٹائی، نعرہ لگانے پر کیا مجبور

ملک میں ہندوتو کے حامی بھگوا شدت پسند غنڈوں کی غنڈہ گردی رکنے کا نام نہیں لے رہی ہے. بی جے پی کو لوک سبھا انتخابات میں واضح اکثریت ملتے ہی ایک بار پھر انہوں نے اپنا رنگ دکھانا شروع کر دیا ہے۔ مآب لانچنگ کے سابقہ واقعہ کی طرح مودی حکومت کی واپسی کے ساتھ پھر مذھب کے نام پر مآب لانچنگ کے واقعیات پیش آنے شروع ہو گئے ہیں. جس کا تازہ واقعہ ہریانہ کے گروگرام میں پیش آیا جہاں ہندوتو ذہنیت کے کٹر پنتھی افراد نے برکت عالم نامی مسلم نوجوان کی اس وقت جم کر پٹائی کر دی جب وہ ٹوپی پہنے صدر بازار کی جامع مسجد سے تراویح کی نماز پڑھ کر لوٹ رہا تھا۔

بتا دیں کہ بہار کے بیگوسرائے کا رہنے والا برکت عالم نامی نوجوان اتوار کی رات صدر بازار گروگرام کی جامع مسجد سے تراویح کی نماز پڑھ کر لوٹ رہا تھا۔ اسی دوران ایک بائیک پر آئے چار نوجوان اور وہاں سے پیدل گزر رہے دو دیگر نوجوانوں نے اس کو روک لیا اور اس کے ٹوپی پہننے پر اعتراض ظاہر کرتے ہوئے کہنے لگے کہ اس علاقہ میں ٹوپی پہن کر آنا منع ہے۔ جس پر عالم نے مخافلت کی تو ان لوگوں نے اس کی پٹائی کردی اور ٹوپی اتارنے کے ساتھ ساتھ جے شری رام کا نعرہ لگانے کے لیے بھی کہا۔

ملی خبروں کے مطابق مظلوم نوجوان نے جب مدد کی اپیل کی اس دوران اسکی چیخ و پکار سن کر صدر بازار علاقے کے کچھ لوگ موقع پر پہنچے، لیکن لوگوں کو آتا دیکھ کر حملہ آور وہاں سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ مسلم نوجوان نے اپنے ساتھ ہوئے واقعہ کے تعلق سے پولیس تھانہ میں شکایت درج کروا دی ہے. پولیس نے متاثرہ کا بیان درج کرکے نامعلوم افراد کے خلاف معاملہ درج کرلیا اور علاقہ میں نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے پولیس ملزمین کی شناخت کرنے میں مصروف ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close