تازہ ترین خبریںدلی نامہ

ہم بھیک نہیں مانگ رہے، رام مندر کے لئے قانون لائے حکومت: بھیا جی جوشی

اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کو لیکر ویشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کے ہزاروں کارکن رام لیلا میدان میں جمع ہو رہے ہیں. اس ریلی کی مدد سے پارلیمنٹ کے موسم سرما کے اجلاس سے قبل مودی حکومت پر رام مندر کو لیکر آرڈیننس لانے کا دباؤ بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے. رام لیلا میدان میں آرایس ایس کے لیڈر سریش بھیا جی جوشی نے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے ایک طرف سے مودی حکومت کو الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا ہے کہ "رام مندر کی بھیک نہیں مانگی جا رہی ہے، حکومت کو قانون بنانا چائیے.

سنگ کے لیڈر بھیا جی جوشی نے اپنے خطاب میں سپریم کورٹ پر بھی تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ عدالت کی حیثیت برقرار رہنا چائیے. آپ کی جانکاری کے لئے بتا دیں کہ اجودھیا تنازعہ کی سماعت کو سپریم کورٹ نے جنوری تک ملتوی کردیا تھا. بھیاجی جوشی نے کہا کہ عدالت کو عوام کے جذبات کا احترام کرنا چاہئے. آگے انہوں نے کہا کہ جس ملک میں عدالتی نظام، عدالت کے تہیں عدم اعتماد ہو اسکا ازالہ مکین نہیں.، اس پر بھی عدالت کو غور و فکر کرے.

ویسے تو ریلی وی ایچ پی کی تھی لیکن سنگ نے بھی اسی بہانے اجودھیا تنازعہ پر مودی حکومت کو ایک سخت پیغام دینے کی کوشش کی ہے. بھياجي جوشی نے کہا ‘اقتدار میں بیٹھے لوگوں نے بھی اعلان کیا ہے کہ مندر وہیں بنائیں گے، اب قرارداد پورا کرنے کا وقت آ گیا ہے. بغیر ہچکچاہٹ کے انہیں پورا کرنا چاہئے. ‘ سنگ لیڈر نے سخت الفاظ میں کہا کہ ‘اقتدار میں بیٹھے لوگوں کو جذبات کا احترام کرنا چاہئے، ہم بھیک نہیں مانگ رہے ہیں.’ وی ایچ پی ریلی کو خطاب کرتے ہوئے بھیا جی جوشی نے کہا کہ ہمارا کسی سے کوئی تنازعہ نہیں ہے چاہے کو کسی بھی مکتب فکر کا ہو. انہوں نے کہا کہ اگر تنازعہ ہی کرنا ہوتا تو اتنی دیر راہ نہیں دیکھتے، اسے فرقہ وارانہ نگاہ سے نہ دیکھیں، مندر کی تعمیر مستقبل میں رام راج کی بنیاد ہوگی. انہوں نے کہا کہ ملک پر حملہ کرنے والوں کے نشان مٹانا چائیے

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close