اترپردیشتازہ ترین خبریں

ہمیر پور قتل معاملہ: بی جے پی ایم ایل اے سمیت 5 ملزموں کی خودسپردگی، سزائے عمر قید

بی جے پی ایم ایل اے اشوک سنگھ چندل سمیت دیگر پانچ نے پیر کو 22 سالہ قدیم قتل معاملے میں مقامی عدالت کے سامنے خود سپردگی کردی ہے۔ عدالت نے ایک ہی کنبے کے پانچ افراد کے قتل کے 22 سالہ پرانے معاملے میں انہیں عمر قید کی سزا سنائی ہے۔

ایم ایل اے اپنے سینکڑوں حامیوں کے ساتھ ڈسٹرکٹ جج کورٹ کے سامنے حاضر ہوئے اور خود سپردگی کی۔ اس کے بعد ایم ایل اے اور دیگر پانچ رگھویر سنگھ، اشوتوش سنگھ، نسیم اور بہن سنگھ کو حراست میں لے لیا گیا۔ عدالتی کاروائی کے دوران بی جے پی ایم ایل اے کے حامیوں نے ایم ایل اے کی حمایت میں نعرہ بازی کی۔ دوپہر بعد عدالت کے ذریعہ ان کو جیل بھیجنے کی امید ہے وہیں قصوار اپنے وکیلوں کے ذریعہ ضمانت کی عرضی داخل کرسکتے ہیں۔ ان چھ کی خود سپردگی کےعلاوہ پولیس نے اتم سنگھ، پردیپ سنگھ، اور سہاب سنگھ کو بھی گرفتار کیا ہے۔ اس معاملے میں ان تینوں کو بھی قصوار پایا گیا ہے۔

عدالت نے گذشتہ 06 مئی کو مفرور نو لوگوں کے خلاف گرفتاری وارنٹ جاری کیا تھا ۔ 19 اپریل کو الہ آباد ہائی کورٹ نے بی جے پی ایم ایل اے اور دیگر کے خلاف ضلع ہمیر پور میں 22 سال قبل ایک ہی خاندان کے پانچ افراد کے اجتماعی قتل کے لئے عمر قید کی سزا سنائی تھی۔

یاد رہے کہ اترپردیش کے ضلع ہمیر پور میں جنوری میں ہوئے قتل معاملے میں اشوک سنگھ چندل ملزم تھے، جہاں دن دھاڑے پانچ لوگوں کو قتل کر دیا گیا تھا، ان مقتول میں ایک نو سال کا بچہ بھی شامل تھا، جب اس معاملے کی سنوائی نچلی عدالت میں کی گئی تو اشوک سنگھ کو بری کر دیا گیا، جس کے بعد اشوک کو بری کرنے والے جج کو برخاست کر دیا گیا تھا.

ریاستی حکومت نے نچلی عدالت کے اس فیصلے کے خلاف الہ آباد ہائی کورٹ میں عرضی داخل کی تھی، اس معاملے کے متاثرہ شخص نے بھی عرضی داخل کی تھی ہائی کورٹ نے سنوائی مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے ملزم اشوک کو عمر قید کی سزا سنائی.

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close