اپنا دیشتازہ ترین خبریں

گھریلو پروازیں 25 مئی سے دوبارہ شروع، ایئرلائن کے نئے قوانین جاری

صرف آن لائن چیک کرنے والے مسافروں کو ہی پرواز کی منظوری ملے گی، مسافر صرف ایک بیگ ہی لے جا سکیں گے، ہوائی اڈے پر کم سے کم دو گھنٹے پہلے پہنچنا ہوگا

کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن کی وجہ سے تقریبا دو ماہ سے بند رہنے والی گھریلو پروازیں 25 مئی سے شروع ہونے جا رہی ہیں۔ ایسی صورتحال میں، ائیرپورٹ اتھارٹی آف انڈیا (اے اے آئی) نے ایک نئی ہدایت نامہ جاری کیا ہے۔ گھریلو پروازوں میں، مسافروں کے لئے سفر سے پہلے بہت سی اہم چیزوں پر توجہ دینا لازمی ہوگا۔ صرف مسافروں کو پرواز کے لئے آن لائن چیکنگ کرنے پر ہی پرواز کی منظوری ملے گی۔ مسافر صرف ایک بیگ لے کر جاسکیں گے۔

اس کے علاوہ، پرواز کے عملے کے ممبران کو مکمل حفاظتی پی پی ای کٹ کے ساتھ ائیرپورٹ پر بھی تعینات کیا جائے گا۔ ہوائی اڈے پر کوئی جسمانی چیکنگ نہیں ہوگی۔ ہوائی اڈے پر صرف آن لائن چیک ان مسافروں کو ہی پرواز کی منظوری ملے گی۔ ایئر لائنز کو مہاماری کے دوران حکومت کے طے شدہ کرایوں کی نچلی اور اوپر کی حدود پر عمل کرنا ہوگا۔ مسافر کے پاس آروگ سیتو کا ہونا ضروری ہے۔ مسافروں کے لئے ماسک پہننا لازمی ہوگا۔ بورڈ میں کھانے کی سہولت نہیں ہوگی۔ صرف ایک بیگ لے جانے کی اجازت ہوگی۔ بورڈنگ کے دوران میگزین یا اخبار لے جانے کی اجازت نہیں۔ مسافر کو پرواز کے وقت سے دو گھنٹے پہلے پہنچنا ہوگا۔ کنٹینمنٹ زون کے تحت آنے والے مسافروں کو پرواز کی اجازت نہیں ہوگی۔ پرواز کے قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کسی بھی مسافر کو سزا دی جائے گی۔

ائیرپورٹ اتھارٹی (اے اے آئی) کے ذریعہ جاری کردہ ایس پی او ایس ۔مسافروں کو پرواز کے روانگی کے وقت سے دو گھنٹے پہلے پہنچنا ہوگا۔ اگر ان کی پروازیں چار گھنٹوں کے اندر ہیں تو مسافروں کو ٹرمینل عمارت میں جانے کی اجازت ہوگی۔ تمام مسافروں کو ماسک اور دستانے پہننے چاہئیں۔ مسافروں کو تھرمل اسکریننگ سے گزرنا پڑے گا۔ مسافروں کے موبائلوں میں آروگ سیتو ایپ کا ہونا ضروری ہے۔ 14 سال سے کم عمر بچوں کو اریوگ ستیو ایپ سے استثنیٰ حاصل ہے۔ اگر انہیں ‘گرین’ کا آپشن نظر نہیں آتا ہے یا ان کے پاس حکومت سے رابطہ کا پتہ لگانے والا ایپ نہیں ہے تو پھر انہیں سفر کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ خصوصی معاملات میں سوائے مسافروں کے ٹرالی منظور نہیں ہوں گے۔ اس کے لئے انہیں بھی ڈس انفیکشن کرنا پڑے گا۔ ریاستی حکومتوں اور انتظامیہ کو یہ یقینی بنانا ہوگا کہ مسافروں اور ایئر لائن کے عملے کے لئے پبلک ٹرانسپورٹ اور نجی ٹیکسیاں دستیاب ہوں۔ ہوائی اڈے پر صرف نجی گاڑیاں یا منتخب ٹیکسی خدمات ہی مسافروں اور ملازمین کو لے جانے کی اجازت ہوگی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close