تازہ ترین خبریںدلی نامہ

گاندھی جی کے عدم تشدد کے اصولوں پر عمل وقت کی ضرورت: حامد انصاری

دہلی پردیش قومی تنظیم کی طرف سے راجدھانی کے ماؤلنکر ہال میں منعقدہ قومی یکجہتی کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے ملک کے سابق نائب صدر جمہوریہ سید حامد انصاری نے کہاکہ آج ملک کی جوصورتحال ہے وہ کسی سے مخفی نہیں ہے ،ایسی نازک صورتحال میں گاندھی جی کو یاد کرنا انتہائی ضروری ہے اور سبھی ہندوستانیوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ گاندھی جی کے بتائے ہوئے اصولوں پر چلیں ۔انہوں نے کہاکہ یہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ آنے والی نسل کو یہ بتائیں گاندھی جی کے عدم تشدد کا راستہ کس طرح سے سبھی ہندوستانیوں کو جوڑ کر رکھے گا ۔

کانفرنس کی صدارت کررہے آل انڈیا قومی تنظیم کے قومی صدر ، رکن پارلیمنٹ اور سابق وزیر طارق انور نے کہ جس طرح سے بھارتیہ جنتا پارٹی پورے ملک میں فرقہ پرستی کا زہر گھولنا چاہتی ہے وہ انتہائی شرمناک ہے اور اس سے لڑائی کیلئے گاندھی جی کا بتایا ہوا راستہ ہی بہترہے۔ انہوں نے کہاکہ ملک کے اندر جس طرح سے نفرت کا زہر گھولا جارہا ہے وہ انتہائی تشویشناک ہے او ر اس سے گاندھی جی کے عدم تشدد کے اصولوں سے ہی لڑانا سکتا ہے۔

سیتا رام یچوری نے اپنے بیان میں کہاکہ 2019میں ہمیں ایک ہی نعرہ دینا ہے ’ گیا دور سرمایہ داری گیا -تماشہ دکھا کر مداری گیا‘ ۔ انہوں نے کہاکہ آج گاندھی جی ہی خطرے میں پڑ گئے ہیں۔ لوک تانترک جنتا دل کے قومی صدر شرد یاد ونے کہاکہ ہماری کوشش ہونی چاہئے کہ ہم فرقہ پرستی سے مقابلہ کیلئے گاندھی جی کے اصولوں کو اپنائیں۔ آر جے ڈی سے لوک سبھا کے رکن جے پر کاش یادو نے کہاکہ آج کچھ لوگ جمہوریت او ر فرقہ پرستی دونوں کو ساتھ لے کرچلنا چاہتے ہیں لیکن اب ایسے لوگ بے نقاب ہوچکے ہیں ۔

اچاریہ پرمود کرشنن نے کہاکہ آج مشکل کام یہ ہے کہ اب ہم اپنے من کی بات بھی نہیں کرسکتے کیونکہ اس پر وزیراعظم کا قبضہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہم وزیراعظم کے عہدے کی عزت کرتے ہیں لیکن ہمیں وزیر اعظم کے جھوٹ سے اسی طرح نفرت ہے جس طرح بی جے پی کی فرقہ پرستی سے ۔ استقبالیہ خطبہ دہلی پردیش قومی تنظیم کے صدر حاجی عبدالسمیع سلمانی نے پیش کیا۔نئی دنیا کے ایڈیٹر شاہد صدیقی نے لوگوں کا شکریہ ادا کیا۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close