اپنا دیشتازہ ترین خبریں

کیرالہ: کئی اضلاع سیلاب کی زد میں، اسکول، کالج، ائیر پورٹ بند، حالات سنگین

کیرالا میں جاری شدید بارشوں کے پیش نظر تمام تعلیمی اداروں میں جمعہ کو چھٹی کا اعلان کر دیا گیا ہے۔ جاری سرکاری پریس ریلیز کے مطابق کالج اور مدرسوں سمیت تمام تعلیمی ادارے آئندہ حکم تک بند رہیں گے۔ وہیں دوسری طرف کوچی بین الاقوامی ہوائی اڈے پر خدمات اتوار کے روز شام تین بجے تک موخر رہیں گی جبکہ چیرتھلئي کے قریب پٹریوں پر درخت گر جانے سے الپوزہ اور ارناكلم کے درمیان ریلوے خدمات متاثر ہوگئی ہیں۔

بتادیں کہ کیرالہ میں زبردست بارش سے کئی شہر اور گاؤں پانی میں ڈوب گئے ہیں۔ ریاست سے اب تک 23 لوگوں کی موت کی خبریں موصول ہو چکی ہیں۔ بڑے پیمانے پر راحت اور بچاؤ کام جاری ہے، لیکن کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ سرکاری ذرائع نے جمعہ کو بتایا کہ ریاست کے کنور ڈفینس کور(ڈی ایس سی) سے فوج کی چھ ٹکڑیاں وائناڈ، کلپیٹا، کنور، اریٹی، تھمارسسیری اور وراجپیٹ-کرگو بھیجی گئی ہیں۔

فوج کی تین ٹکڑیاں پینگوڈے ملٹری اسٹیشن سے الپپوجھا، پتھنم تھیٹا اور ایرنا کولم بھیجی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ پینگوڈے فوجی ٹھکانے پر فوج کی دوٹکڑیاں تیار رکھی گئی ہیں۔ فوج کی ایک ٹکڑی میں ایک افسر، تین جونیئر کمیشن افسر (جے سی او) اور دیگر رینک کے 55جوان ہوتے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ وايناڈ ضلع میں 2،812 خاندانوں کے قریب 9،951 لوگوں کو 105 ریلیف کیمپوں میں پہنچایا گیا ہے۔ وايناڈ ضلع میں کئی مقامات پر موسلاداھر بارش کی وجہ سے تودے گرنے گرنے کے واقعات پیش آئے ہیں۔ ملاپورم ضلع میں 993 خاندانوں کے 4،106 لوگوں کو 26 ریلیف کیمپوں میں منتقل کر دیا گیا۔ ارناكلم ضلع میں 41 ریلیف کیمپ قائم کیے گئے ہیں اور ان میں 237 خاندانوں کے 812 لوگوں کو بھیجا گیا ہے۔

ریاست کے كوزی کوڈ ضلع میں تقریباً 1،017 لوگوں کو 349 ریلیف کیمپوں میں پناہ دی گئی ہے۔ اڈوكي ضلع میں 799 لوگوں کو 232 ریلیف کیمپوں اور کانپور ضلع میں 807 لوگوں کو 200 ریلیف کیمپوں میں پناہ دی گئی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close