اپنا دیشتازہ ترین خبریں

کورونا کی دہشت: دمدم جیل میں خونریز تصادم، قیدیوں نے لگائی آگ، پولیس کا لاٹھی چارج

کورونا کی دہشت کے درمیان آج صبح دمدم سنٹرل جیل میں قیدیوں اور پولس کے درمیان خوفناک تصادم سامنے آیاہے۔ دراصل کورونا وائرس کی وجہ سے جیل انتظامیہ نے قیدیوں کو رشتہ داروں سے ملاقات کرنے پر روک لگا دی تھی اس کی وجہ سے آج صبح سے قیدی احتجاج کر رہے تھے۔

جیل ذرائع کے مطابق قیدیوں نے جیل کے ایک بڑے حصہ کو اپنے قبضے میں لے لیا تھا۔ جیل کے اندر آگ لگا دی، کچھ قیدیوں نے سیڑھی کے ذریعہ فرار ہونے کی بھی کوشش کی۔ ابھی تک یہ واضح نہیں ہوسکا کہ جھڑپ کے دوران کوئی فرار ہوا ہے یا نہیں۔ جیل کو کنٹرول کرنے کیلئے پولس اہلکاروں کو جیل میں داخل ہونا پڑا۔ کچھ قیدیوں نے گیس سلینڈر میں آگ لگانے کی بھی کوشش کی اس کی وجہ سے صورت حال دھماکہ خیز ہوگیا تھا۔ حالات کو کنٹرول کرنے کیلئے پولس کو قیدیوں پر لاٹھی چارج بھی کرنی پڑی۔

قیدیوں کو کوڈ و۔19 وائرس سے متاثر ہونے سے بچانے کے لئے، ریاستی محکمہ جیل نے عارضی طور پرقیدیوں کی اپنے اہل خانہ سے ملاقات پر روک لگانے کا فیصلہ کیا تھا۔ جیل ذرائع کے مطابق دمدم سنٹرل جیل وارڈ نمبر 4 میں قیدیوں نے رشتہ داروں سے ملاقات سے روک دئیے جانے سے ناراض ہوکر صبح سے ہی احتجاج کرنے لگے تھے۔ جیل سپرنڈنٹ نے قیدیوں سے بات چیت کرکے مسئلہ کو سلجھانے کی کوشش کی۔ قیدیوں کا کہنا تھا کہ اگر حکومت نے سزا یافتہ قیدیوں کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا ہے تو انڈر ٹرائل قیدیوں کو بھی رہا کیا جائے۔ جب جیل سپرنڈنٹ نے اس مطالبے کو تسلیم کرنے سے انکار کردیا تو قیدیی تشدد پر اتر آئے اور اس کے بعد حالات ہنگامہ خیز ہوگئے۔قیدیوں نے الزام عاید کیا ہے کہ باہر سے آئے پولس اہلکاروں نے قیدیوں کے ساتھ بڑے پیمانے پر مارپیٹ کی ہے۔

جیل میں آگ لگنے کے بعد ریاستی وزیر سوجیت باسو موقع پر پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا۔ جیل انتظامیہ نے کہا کہ قیدیوں نے بڑے پیمانے پر توڑ پھوڑ کی ہے۔ وارڈ کے گیٹ کو توڑ دیا گیا ہے، فائر بریگیڈ کی گاڑیوں کی مدد سے آگ پر قابو پالیا گیا ہے۔ قیدیوں کے اہل خانہ نے الزام عاید کیا ہے اس واقعے میں دو قیدیوں کی موت بھی ہوگئی ہے جب کہ جیل انتظامیہ نے اس کی تصدیق نہیں کی ہے۔

جیل انتظامیہ نے اس واقعے کیلئے کسی بھی افسر کی برطرفی سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حالات کو کنٹرول کرنے کیلئے لاٹھی چارج کی گئی ہے۔ جیل میں اضافی نفری کو تعینات کیا گیا۔ محکمہ جیل کے اعلی عہدیدار جیل پہنچ کر حالات جائزہ لیا ہے، لیکن صورتحال اب بھی خوفناک ہے۔ جیل انتظامیہ کے مطابق کچھ قیدیوں نے لاکر توڑ کر اسلحہ کو قبضہ میں لے لیا ہے۔ خدشہ ہے کہ ان ہتھیاروں سے دوبارہ پولس اہلکاروں پر حملہ کرسکتے ہیں اور دوسرے یہ کہ قیدیوں کے قبضے میں گیس سلینڈ بھی ہیں وہ اس کے ذریعہ دھماکہ بھی کرسکتے ہیں۔ اس لئے جیل آفس میں موجود عہدیدار قیدیوں کے ایک حصے سے بات کرکے صورتحال پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close