تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

کورونا وائرس کی پیش نظر ’جنتا کرفیو‘ کی تیاری

نوئیڈا سیکٹر۔ 16سینٹرل آٹو مارکیٹ پولیس نے کرائی شٹ ڈاؤن ٭کورونا کے سبب پہلے سے نافذ ہے دفعہ 144

نوئیڈا (انور حسین جعفری)
دنیا بھر کو اپنی چپیٹ میں لئے ہوئے کورونا وائرس کی وباء کے ہندوستان میں پیر جمنے سے روکنے کیلئے حکومت کے ذریعہ کی جا رہی تیاریوں میں وزیر اعظم نریند مودی کی جانب سے ملک کے عوام سے ایک دن کا ’جنتاکرفیو‘ لگانے کی اپیل کے بعد ریاستوں میں اس کو لاگو کرنے کی تیاریاں چل رہی ہیں۔ جس کے چلتے دہلی این سی آر میں گاڑیوں کی مرمت کی سب سے بڑی آٹو مارکیٹ مانے جانے والی نوئیڈا سیکٹر۔ 16 میں واقع سینٹرل آٹو موبائل مارکیٹ جنتا کرفیو سے قبل ہی آج شٹ ڈاؤن کرا دی گئی۔ حالانکہ جنتا کرفیو اتوار کے روز لگانے کی وزیر اعظم نے اپیل کی ہے، لیکن نوئیڈا پولیس نے آج ہفتہ کے روز بھی جنتا کرفیو جیسے حالات بناتے ہوئے تمام مکینیکل ورک شاپس، شیشے کی دکانیں، ڈینٹنگ پینٹنگ، سیٹ کور، چابیاں بنانے کی دکانیں، پولیوشن چیکنگ سینٹر وغیرہ سمیت آٹو موبائل سے متعلق کام ہونے والی تمام دکانیں گیرج بند کرا دیئے۔

بتا دیں کہ دہلی این سی آر میں نوئیڈا کی یہ سینٹرل آٹو موبائل مارکیٹ سب سے بڑی مارکیٹ شمار ہوتی ہے جہاں ہر طرح کی گاڑیوں کی مکمل مرمت کا کام ہوتا ہے۔ دہلی میں گاڑیوں کی مرمت کی اکثر مارکیٹں سیل ہونے کے بعد یہاں این سی آر سمیت دہلی کے اکثر گاڑیوں والے یہاں اپنی گاڑیوں کی مختلف مرمت کرانے اور سیکنڈہینڈ گاڑیوں کی خرید و فروخت کیلئے بھی آتے ہیں۔ مارکیٹ بند کرا دیئے جانے پر زبردست پریشانی کا سامناکرنا پرا۔

سینٹرل آٹو موبائل مارکیٹ میں کام کرنے والے مختلف مستریوں کا کہنا تھا کہ جنتا کرفیو اتوار کو لگنا ہے اور پیر کے روز اس مارکیٹ کی ہفتہ واری چھٹی ہوتی ہے، اس لئے آج ہفتہ کے روزیہ مارکیٹ پوری طرح کھلی تھی اور گاڑیوں کی مختلف مرمتی کام کرنے والے مستری آج کام پر آئے تھے، لیکن پولیس نے جنتا کرفیو کی تیاری کے سبب تمام دکانیں، ورک شاپس بند کرا دیں۔ جبکہ گا ڑیوں میں کام کر رہے کاریگروں کو بھی پکڑ کر پولیس کی گاڑیوں میں بٹھا لیا، حالانکہ کچھ دور لیجا کر ان کو وارننگ دے کر چھوڑ بھی دیا گیا۔

مارکیٹ کے مستریوں کا کہنا ہے کہ حالانکہ نوئیڈا میں سیکٹر۔ 18 میں اٹّا مارکیٹ بھی آٹو موبائل مارکیٹ ہے لیکن یہ مارکیٹ دہلی این سی آر کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے، جس سے ہزاروں لوگوں کی روز گار جڑے ہوئے ہیں۔ یہاں کام کرنے والے مستری روزانہ کام کرکے اپنے گھروں کا خرچ چلاتے ہیں۔ جبکہ کچھ لوگ روزن داری پر کام کرتے ہیں۔ لیکن پولیس کے زبردستی دکانیں بند کرانے پر مستریوں کو آج خالی ہاتھ ہی اپنے گھروں کو لوٹنا پرا۔

وہیں دہلی سے گا ڑیوں کے کام کرانے آئے کچھ لوگوں کا کہنا تھا ہم یہ سوچ کر آئے تھے کہ جنتا کرفیو اتوار کو ہے اور پیر کو مارکیٹ کی چھٹی ہوتی ہے اس لئے گاڑی کا کام آج کرا لیا جائے۔ لیکن پولیس والے آئے اور کام بند کرنے کی ورننگ دے کر چلے گئے، ساتھ ہی کہہ گئے کہ اگر دوبارا آئے اور دکان کا شٹر اٹھے ہوئے یا کام کرتے دیکھا تو بند کر دیں گے۔ جس کے ڈر سے مستری بھی کام بند کرکے چلے گئے اور پوری مارکیٹ لاک ڈاؤن ہوگئی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close