بہار- جھارکھنڈ

کنہیا کمار کے قافلے پر پھر ہوا حملہ

کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (سی پی آئی) لیڈر اور جواہرلال نہرو یونیورسیٹی (جے این یو) طلبا یونین کے سابق صدر کنہیا کمار کا قافلہ بہار میں سپول کے بعد آج جموئی میں حملے کا شکار ہو گیا۔

مسٹر کمار اتوار کو ’جن گن یاترا ‘ پر جموئی پہنچے تھے۔ جہاں انہوں نے ایک اجلاس کو خطاب کیا تھا۔ جموئی میں رات کو قیام کرنے کے بعد ان کا قافلہ سموار کو جیسے ہی مہیشوری بس اسٹینڈ کے پاس پہنچا کچھ لوگوں نے ان کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے حملہ کر دیا۔ حملہ کرنے والے نوجوان جائے مقام سے چلے گئے لیکن مسٹر کمار کے حامیوں اور مقامی لوگوں کے مابین کافی نوک جھونک ہوئی۔ بعد میں موقع پر موجود پولیس اور افسران نے معاملے کو پرسکون کرایا۔ اس کے بعد مسٹرکمار کا قافلہ آگے بڑھا۔ جموئی کے اسٹیڈیم میدان میں اتوار کو منعقدہ پروگرام کے بعد بھارتیہ جنتا یوا مورچہ کے کارکنان نے نعرے بازی کی تھی۔

غور طلب ہے کہ اس سے قبل قافلے پر سپول میں بھی حملہ کیا گیا تھا۔ بدھ کو سپول میں عوامی اجلاس کو خطاب کرنے کے بعد سہرسہ جا رہے مسٹر کمار کے قافلے پر ملک چوک کے پاس کچھ لوگوں نے پتھر وں سے حملہ کیا تھا۔ اس حملے میں قافلے کی ایک گاڑی کے ڈرائیور کا سر زخمی ہوگیا جبکہ کنہیا کو بھی معمولی طور پر زخمی ہوگئے تھے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close