اترپردیشتازہ ترین خبریں

کملیش قتل معاملہ: قاتلوں کے کپڑے ہوٹل سے برآمد کرنے کا دعوی، یوگی سے کنبہ کی ملاقات

اترپردیش کی راجدھانی لکھنؤ کے ایک ہوٹل کے کمرے سے اتوار کو پولیس نے سخت گیر ہندو لیڈر کملیش تیواری کے قاتلوں کے بھگوا رنگ کے خون میں لت پت کُرتے سمیت کچھ دیگر اشیاء برآمد کئے ہیں۔

پولیس نے یہاں قیصر باغ علاقے کے ہوٹل خالصہ کے ایک کمرے سے خون لگے بھگوا رنگ کے کرتے اور شیونگ کٹ سمیت کچھ دیگر سامان برآمد کئے ہیں۔ سامان ایک بیگ میں رکھے ہوئے تھے۔ ہوٹل کے منیجر نے کہاکہ گجرات کے سورت سے آئے دو افراد شیخ عفان حسین اور پٹھان معین الدین ہوٹل میں رکے تھے۔ انہوں نے اپنا پتہ پدماوتی سوسائٹی، اپارٹمنٹ نمبر۔ 15، سورت لکھایا تھا۔ دونوں واردات کی ایک رات قبل رات 11 بجے کے آس پاس ہوٹل آئے تھے۔

پولیس کے مطابق 18 اکتوبر کو واردات کو انجام دینے کے بعد ہوٹل آئے اور کپڑے تبدیل کئے جسے آج برآمد کرلیا گیا ہے۔ پولیس بجنور سے تحویل میں لیے گئے دو مولانا انوارالحق اور نعیم کاظمی کے کردار کی بھی جانچ کررہی ہے۔ دونوں کے بھائی سورت میں رہتے ہیں۔

کملیش تیواری کے کنبے کی یوگی سے ملاقات

ہندو سماج پارٹی کے صدر کملیش تیواری کے دن دہاڑے ہوئے قتل کے بعد آج متأثرہ کنبے نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ سے ان کی سرکاری رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ کملیش تیواری کے کنبے نے 11 نکاتی مطالبے پر مشتمل ایک لیٹر وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کو سونپا ہے۔ کملیش کا کنبہ لکھنؤ میں کملیش تیواری کی مورتی تعمیر کرانے کا مطالبہ کررہا ہے۔ لیٹر میں خورشید باغ کا نام بدل کر کملیش باغ رکھنے کے ساتھ ہی مجرموں پر سخت کاروائی کرنے کا مطالبہ شامل ہے۔

وزیراعلی نے اچانک ڈائرکٹر جنرل آف پولیس او پی سنگھ کو بھی طلب کیا ہے۔ ان کے ساتھ ایس آئی ٹی انچارج انسپکٹر جنرل آف پولیس ایس کے بھاگوت بھی پہنچے۔ وزیر اعلی نے کملیش تیواری کے کنبے کے سامنے ہی او پی سنگھ سے قتل کی جانچ کی موجودہ صورتحال کے بارے میں تفصیلات طلب کیں اور قاتلوں کو جلد ہی گرفتارکر نے کی ہدایت دی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close