اترپردیشتازہ ترین خبریں

کملیش تیواری کے قاتلوں کی گرفتاری پر لاکھوں روپئے کا اعلان

گجرات سے گرفتار تینوں ملزمین کو دارالحکومت لے کر پہنچی پولیس

ہندو سماج پارٹی کے صدر کملیش تیواری کا گزشتہ جمعہ کے روز ان کے دفتر پر قتل کرنے والے ملزمین معین الدین اور اشفاق پر اتر پردیش پولیس نے پیر کے روز ڈھائی ڈھائی لاکھ روپے کا انعام کا اعلان کر دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی قتل میں گجرات سے گرفتار تین ملزمین سلیم شیخ، فیضان اور رشید احمد کو اترپردیش پولیس لکھنؤ لے کر آ گئی ہے۔

واضح رہے کہ پیر کی صبح کی فلائٹ سے ملزمین کو لکھنؤ لایا گیا۔ کملیش تیواری کے قتل معاملہ میں چار اضلاع اور باہر کے ریاستوں میں سرگرم یوپی پولیس کو شاہ جہاں پور میں سی سی ٹی وی فوٹیج میں معین الدین اور اشفاق کو دیکھا گیا ہے۔ دونوں ایک چار پہیا گاڑی سے آتے ہوئے نظر آئے ہیں۔ اس سی سی ٹی وی فوٹیج کے ملنے پر یوپی پولیس نے دونوں ملزمین پر انعام کی رقم کا اعلان کیاہے، جس سے دونوں کو شناخت کر گرفتار کرانے میں عام لوگوں سے مدد مل سکے۔

پلیا میں کملیش کے قاتلوں نے پانچ ہزار روپے پر ایک انووا بک کی اور اس سے وہ رات تقریباً 12 بجے شاہ جہاں پور پہنچے۔ ریلوے اسٹیشن کے پوچھ گچھ کاؤنٹر پر جاکر انہوں نے ٹرین کے بارے میں معلوم کیا۔ اس کے بعد انووا گاڑی چھوڑ دی۔ دونوں قاتل پیدل ہی اسٹیشن روڈ سے اشفاق نگر پولیس چوکی کی جانب جاتے ہوئے سی سی ٹی وی میں قید ہوئے ہیں۔ ان کے پیچھے لگی ایس ٹی ایف بھی کچھ ہی دیر کے بعد شاہ جہاں پور پہنچی۔ انووا کے ڈرائیور کو حراست میں لے لیا اور اس سے سخت پوچھ گچھ کی۔ ڈرائیور نے بتایاکہ اس کے مالک پلیا میں رہتے ہیں اور مالک کے رشتہ دار گجرات میں رہتے ہیں۔ گجرات سے ہی فون آنے پر پانچ ہزار روپے کرائے پر مالک نے کار لے جانے کے لئے کہا تھا، باقی اسے کوئی معلومات نہیں ہے۔ اس کے بعد ایس ٹی ایف اور مقامی پولیس نے مل کر آس پاس کے ہوٹل، مدرسے اور دیگر ممکنہ جگہوں پر دبش دینی شروع کر دی ہے، حالانکہ ابھی تک قاتلوں کا پتہ نہیں لگ سکا ہے۔

کملیش قتل کے بعد ایس ٹی ایف کو ان کی سیتاپور، غازی آباد میں بھی لوکیشن ملی تھی۔ اشفاق کے کانپور سے سم خریدنے کی بھی معلومات یوپی پولیس و ایس ٹی ایف کو ملی تھی۔ اے ٹی ایس بھی اس معاملے میں سرگرم ہے اور سرحدوں پر دونوں کی گرفتاری کی کوشش کی جا رہیں ہے، جس سے یہ دونوں کسی جگہ فرار ہونے میں کامیاب نہ ہو سکیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close