آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

کمزور امریکی ائر ڈیفنس سسٹم سعودی عرب میں حملے روکنے میں ناکام: روس

روس نے کہا ہے کہ سعودی عرب میں تعینات امریکی ائرڈیفنس سسٹم نٹ ورک کمزور صلاحیت کی وجہ سے سعودی عر کے تیل تنصیبات پر حملہ روکنے میں ناکام رہا۔ روسی وزارت دفاع کے ایک سینئر افسر نے جمعرات کو یہ اطلاع دی۔

امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے سعودی عرب کے دفاعی ائر ڈیفنس سسٹم پر بدھ کو کہاتھا کہ پوری دنیا میں ائر ڈیفنس سسٹم کو ملی جلی کامیابی ملتی ہے۔ سعودی عرب کی ائر ڈیفنس سسٹم میں امریکی سسٹم ’پیٹریاٹ‘ بھی شامل ہے۔ افسر کے مطابق سعودی عرب کے شمالی سرحد پر 88 ’’پیٹریاٹ‘ لانچرز تعینات ہیں۔ اس کے علاوہ خلیج فارس میں امریکی بحریہ کے ایجیس میزائل ائر ڈیفنس سسٹم اور 100 ایس ایم۔2 میزائل سے لیس تین ڈسٹرائر جنگی جہاز بھی تعینات ہیں۔

انہوں نے تعجب کا اظہار کیا کہ اتنی طاقتور ائر ڈیفنس سسٹم ہونے کے باوجود درجنوں ڈرون اور کروز میزائلیں ان کی نظر سے کیسے بچ گئیں۔ انہوں نے کہا کہ اس کا سیدھا مطلب ہے کہ امریکہ نے پیٹریاٹ اور ای جیس میزائل کے بارے میں جتنی تشہیر کی جاتی ہے ان کی صلاحیت اتنی نہیں ہے۔ چھوٹے سائز کے اہداف اور کروز میزائلوں کو روکنے کی ان کی صلاحیت کم ہے۔ وہ دشمن کے بڑے ہوائی حملے کو ناکام بنانے کی اہلیت نہیں رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کی سب سے بڑی تیل کمپنی آرامکو کے تیل تنصیبات پر سنیچر کو ڈرون حملے کئے گئے جس میں بڑے پیمانے پر نقصان ہوا۔ حملے کی وجہ سے ان تنصیبات میں تقریبا 57 لاکھ بیرل فی دن تیل کی پیداوار ٹھپ ہوگیا جو عالمی سطح پر تقریبا پانچ فیصد ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close