اپنا دیشتازہ ترین خبریں

کرناٹک ضمنی انتخابات: یدی یورپا کا مشن کامیاب، 12 سیٹوں پر کھلا کمل

کرناٹک میں بی ایس یدی یورپا کی قیادت والی حکومت کے لئے آزمائش کے طور پر دیکھے جا رہے اسمبلی کی 15 سیٹوں پر ہوئے ضمنی انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے پیر کے روز 12 سیٹیں جیت کر کانگریس اور دیگر جماعتوں کا تقریبا خاتمہ کرنے کے ساتھ ہی واضح اکثریت حاصل کرلی ہے۔ کانگریس کی جھولی میں صرف دو سیٹیں گئی ہیں جبکہ جنتا دل (ایس) کا کھاتہ بھی نہیں کھل پایا ہے۔ جبکہ ایک سیٹ آزاد امیدوار کو ملی ہے۔

ایچ ڈی كمارسوامي کی قیادت والی مخلوط حکومت کے خاتمے کے بعد مسٹریورپا نے اس سال 26 جولائی کو وزیر اعلی کے عہدے کا حلف لیا تھا۔ ان ضمنی انتخابات میں مسٹر یدی یورپا کو اپنی حکومت کے لئے معمولی اکثریت حاصل کرنے کے لئے کم از کم چھ سیٹوں کی ضرورت تھی۔ بی جے پی نے ضمنی انتخابات میں بڑی کامیابی حاصل کرکے ریاست میں مستقل اکثریت والی حکومت بنانے کا راستہ ہموار کر لیا ہے۔ مسٹر یدی یورپا نے جیتنے والے ممبران اسمبلی کو کابینہ میں جگہ دینے کا وعدہ کیا ہے۔ پارٹی ہائی کمان سے اگرچہ اب اس کی منظوری لینی ہوگی۔

سبکدوش ہونے والے اسمبلی صدر رمیش کمار کے کانگریس اور جے ڈی ایس کے ممبران اسمبلی کو تسلیم نہ کرنے اور انہیں نااہل قرار دیے جانے کے بعد یہ ضمنی انتخابات اہم مانا جا رہا تھا۔ اس کے بعد ممبران اسمبلی نے نااہلی کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا اور عدالت عظمیٰ سے انہیں ضمنی انتخاب لڑنے کی اجازت ملی تھی۔

بی جے پی گوكاك، يلاپور، راني بنور، وجئے نگر، چكبلاپور، مہالکشمی لیک آوٹ اور كرشنا راج پیٹ، اتھانی، کگوا ہیرکیرور اور یشونت پور کی سیٹیں جیت چکی ہے اور کے آر پور میں اس کے امیدوار بی ایس باسوراجہ فیصلہ کن برتری حاصل کئے ہوئے ہیں۔ کانگریس شیواجی نگر اور هناشر ومیں جیتی ہے۔ ضمنی انتخابات میں هوساكوٹے حلقہ سے آزاد امیدوار شرد کمار بچےگوڑ نے 81 ہزار 667 ووٹ حاصل کرکے بی جے پی کے ناگراجو کو ہرایا۔ ناگراجو کو 70183 ووٹ ملے ہیں۔

کرناٹک اسمبلی میں 224 سیٹیں ہیں۔ سترہ ممبران اسمبلی کو نااہل ٹھہرانے جانے کے بعد 207 رکن رہ گئے تھے۔ اس لحاظ سے اکثریت کے لئے 104 نشستوں کی ضرورت تھی۔ بی جے پی کے پاس فی الحال 105 نشستوں کے علاوہ ایک آزاد امیدوار امميوار کی حمایت حاصل تھی۔ پندرہ سیٹوں پر ضمنی انتخابات ہونے کے بعد ممبران اسمبلی کی تعداد 222 ہو گئی اور ایسی صورت میں بی جے پی کو اکثریت کے لئے 112 رکن چاہئے۔ بی جے پی کو اقتدار میں رہنے کے لئے کم از کم چھ سیٹوں کی ضرورت تھی۔

گزشتہ سال مئی میں کرناٹک اسمبلی انتخابات میں کوئی بھی پارٹی اکثریت حاصل نہیں کر پائی تھی۔ بی جے پی سب سے بڑی پارٹی کے طور پر ابھری لیکن اکثریت سے کچھ سیٹیں دور رہ گئی۔ کانگریس دوسرے نمبر پر اور جے ڈی (ایس) تیسرے نمبر پر رہی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close