تازہ ترین خبریںدلی نامہ

چھٹے مرحلے کے لئے امیدواروں نے کئے کاغذات نامزدگی داخل

کانگریس کے امیدوار 23 اپریل کو کریں گے نامزدگی داخل، سبھی امیدواروں نے نامزدگی سے قبل کیا روڈ شو، پارٹی کے سینئر لیڈران اور وزراء رہے شریک

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
پارلیمانی انتخابات کے چھٹے مرحلے کےلئے راجدھانی دہلی میں آج نامزدگی داخل کرنے کی گہما گہمی رہی۔ نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ سے ایک روز قبل آج عام آدمی پارٹی اور بی جے پی کے امیدواروں نے پرچہ نامزدگی داخل کئے، جبکہ کانگریس کے امیدوار آخری روز 23 اپریل کو نامزدگی داخل کریں گے۔ عام آدمی پارٹی کے چھ امیدواروں میں دلیپ پانڈے، آتشی، پنکج گپتا، گوگن سنگھ، راگھو چڈیا، برجیش گوئل نے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔ جبکہ بی جے پی کی جانب سے دہلی بی جے پی کے صدر منوج تیواری، پرویش ورما اور چاندنی چوک سے ڈاکٹر ہرش وردھن سمیت دیگر امیدواروں نے پرچہ داخل کیا۔

بتا دیں کہ منوج تیواری کے ساتھ ہریانوی سنگر سپنا چودھری، ڈاکٹر ہرش وردھن کے ساتھ مرکزی وزیر مختار عباس نقوی اور نتن گڈگری جبکہ پرویش ورما کے ساتھ مرکزی وزیر نرملا سیتا رمن پرچہ داخل کرانے ساتھ گئے۔ اس سے قبل سبھی امیدواروں نے روڈ شو بھی کیا۔ عام آدمی پارٹی کی جانب سے کئے گئے روڈ شو میں پارٹی کے سینئر لیڈران کے علاوہ بڑی تعداد میں کارکنان موجود تھے۔ مغربی دہلی سے عام آدمی پارٹی کے لوک سبھا امیدوار بلبیر سنگھ جاکھڑ 18 اپریل کو ہی اپنا پرچہ داخل کر چکے ہیں۔ شمالی مشرقی دہلی سے دلیپ پانڈے کی پرچہ نامزدگی اور روڈ شو میں وزیر گوپال رائے اور راجندر پال گوتم، ایم ایل اے حاجی اشراق خان، کونسلر عبدالرحمن اور دیگر لیڈران شامل ہوئے۔ مشرقی دہلی سے آتشی نے تری لوک پوری میں روڈ شوکیا جس میں پارٹی کے سینئر لیڈر منیش سسودیا، دہلی اسمبلی کے اسپیکر رام نواس گوئل، ایم ایل اے منوج کمار اور انل واجپئی وغیرہ شامل ہوئے۔

نئی دہلی سے برجیش گوئل کے روڈ شو میں رکن پارلیمنٹ این ڈی گپتا اور وزیر ستیندر جین موجو د رہے۔ شمالی مغربی دہلی سے گوگن سنگھ کے روڈ شو میں دہلی کے وزیر گیلاش گہلوت شامل ہوئے۔ چاندنی چوک سے پنکج گپتا کے روڈ شو میں رکن پارلیمنٹ سنجے سنگھ اور وزیر عمران حسین، چیئر مین محمد صادق وغیرہ شامل ہوئے۔ جنوبی دہلی سے راگھو چڈھا کے پرچہ نامزدگی میں رکن پارلیمنٹ سنجے سنگھ شامل ہوئے۔

اس دوران جگہ جگہ امیدواروں کا پرجوش استقبال بھی کیا گیا اور لیڈران نے لوگوں سے پارٹی کے امیدواروں کو ووٹ دینے کی اپیل بھی کی۔ عام آدمی پارٹی لیڈران کا کہنا تھا کہ مکمل ریاست کے بغیر دہلی کی ترقی ادھوری ہے، کانگریس اور بی جے پی نے اپنے منشور میں دہلی کو مکمل ریاست کا وعدہ کیا تھا لیکن جیتنے کے بعد وہ اپنے وعدے سے مکر گئے، پارٹی لیڈران نے یہ بھی کہاکہ اس مرتبہ دہلی سے عام آدمی پارٹی کے ساتوں امیدواروں کو کامیاب بناکر پارلیمنٹ بھیجیں توہم دو سال میں مکمل ریاست کا درجہ لے آئیں گے۔ شمال مشرقی دہلی سے لوک سبھا امیدوار دلیپ پانڈ ے نے اس روڈ شو کو ’یورتن یاترا‘ کا نام دیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close