اپنا دیشتازہ ترین خبریں

چدمبرم کو ضمانت ملنے کی امید، سماعت کے لئے سپریم کورٹ راضی

سپریم کورٹ آئی این ایکس میڈیا ڈیل کیس میں ای ڈی کے معاملے میں پی چدمبرم کی ضمانت کی درخواست پر 20 نومبر کو سماعت کرے گا۔ آج چدمبرم کی جانب سے سینئر وکیل کپل سبل نے نئے چیف جسٹس ایس اے بوبڈے کی صدارت والی بنچ کے سامنے اس درخواست پر جلد سماعت کا مطالبہ کیاجس کے بعد عدالت نے 20 نومبر کو سماعت کرنے کا حکم دیا۔

چدمبرم نے دہلی ہائی کورٹ کی جانب سے ضمانت کی درخواست مسترد کرنے کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔ گزشتہ 15 نومبر کو ہائی کورٹ نے آئی این ایکس میڈیا ڈیل کیس میں ای ڈی کے معاملے میں پی چدمبرم کی ضمانت کی درخواست کومسترد کر دیا تھا۔ جسٹس سریش کیت نے کہا تھا کہ چدمبرم کے خلاف سنگین الزامات ہیں۔ انہیں ضمانت دینے سے معاشرے میں غلط پیغام جائے گا۔

ای ڈی نے چدمبرم کی ضمانت کی مخالفت کی تھی۔ ای ڈی نے کہا تھا کہ معاملے کی سنجیدگی کو دیکھتے ہوئے چدمبرم کو ضمانت نہیں دی جانی چاہئے۔ ای ڈی نے کہا تھا کہ چدمبرم کا یہ کہنا غلط ہے کہ ان کے خلاف کوئی کیس نہیں بنتا ہے۔ گزشتہ 1 نومبر کو عدالت نے صحت کی بنیاد پر چدمبرم کی پیشگی ضمانت کی درخواست مسترد کر دیا تھا۔ ایمس اسپتال نے اپنی رپورٹ میں کہا تھا کہ چدمبرم کی حالت ٹھیک ہے اور انہیں اسپتال میں داخل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

گزشتہ 13 نومبر کو عدالت نے چدمبرم کو 27 نومبر تک عدالتی حراست میں بھیجنے کا حکم دیا تھا۔ سی بی آئی کے معاملے میں چدمبرم کو سپریم کورٹ سے ضمانت مل چکی ہے۔ گزشتہ 17 اکتوبر کو دہلی کی راؤز ایونیو کورٹ نے آئی این ایکسمیڈیا ڈیل معاملے میں چدمبرم کو 24 اکتوبر تک کی ای ڈی حراست میں بھیجنے کا حکم دیا تھا۔

چدمبرم کو آئی این ایکس میڈیا ڈیل کے سی بی آئی سے جڑے معاملے میں گزشتہ 21 اگست کو گرفتار کیا گیا تھا۔ آئی این ایکس میڈیا معاملے میں سی بی آئی نے 15 مئی 2017 کو ایف آئی آر درج کی تھی۔ اس میں الزام لگایا گیا ہے کہ وزیر خزانہ کے طور پر چدمبرم کی مدت کے دوران 2007 میں آئی این ایکس میڈیا کو 305 کروڑ روپے کی غیر ملکی فنڈز حاصل کرنے کے لئے فارین انوسٹمنٹ پروموشن بورڈ سے منظوری دینے میں گڑبڑی کی گئی۔ اس کے بعد ای ڈی نے 2018 میں منی لانڈرنگ کا کیس درج کیا تھا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close