اپنا دیشتازہ ترین خبریں

پلوامہ کی پہلی برسی: مودی، شاہ اور راہل سمیت کئی لیڈروں کا شہیدوں کو خراج عقیدت

وزیر اعظم نریندر مودی، مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ، وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ اور کانگریس لیڈر راہل گاندھی سمیت کئی لیڈروں نے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کی پہلی برسی پر شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان ان کی شہادت کو کبھی نہیں بھولے گا۔ انہوں نے جمعہ کے روز ٹویٹ کرکے کہا ’’گزشتہ سال پلوامہ خود کش حملے میں شہید بہادر جوانوں کو خراج عقیدت۔ وہ غیر معمولی شخص تھے جنہوں نے ہمارے ملک کی خدمات اور تحفظ کے لئےاپنی زندگی کو وقف کر دیا۔ ہندوستان ان کی شہادت کو کبھی نہیں بھولے گا‘‘۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے ٹویٹ کرکے کہا،’’ہندوستان اپنے ان بہادر فوجیوں اور گھروالوں کا ہمیشہ احسان مند رہے گا جنہوں نے ملک کی خود مختاری اور سالمیت کےلئے اپنی جانوں کی قربانی دی تھی۔‘‘

اس کے علاوہ وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے ایک ٹویٹ کرکے کہا کہ 2019 میں آج ہی کے دن جموں وکشمیر کے پلوامہ میں ہوئے خود کش حملے کے دوران اپنا فرض ادا کرتے ہوئے شہید ہونے والے جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔ ہندوستان ان کی قربانی کو کبھی فراموش نہیں کر پائے گا۔ پورا ملک دہشت گردی کے خلاف متحد ہے اور ہم اس خطرے کے خلاف اپنی جنگ جاری رکھنے کے لئے پابند عہد ہیں‘‘۔

کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے پلوامہ میں پچھلے سال 14فروری کو مرکزی ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف)کے قافلے پر خودکش حملے میں شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے سوال کیاکہ اس حملے کا سب سے زیادہ فائدہ کسے ہوا؟ انہوں نے جمعہ کو پلوامہ حملے کی پہلی برسی پر ٹویٹر پر شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا اور تین سوال پوچھے۔

پہلا سوال پوچھا،’’اس حملے سے سب سے زیادہ فائدہ کسے ہوا؟
دوسرا سوال،’’اس حملے کی جانچ میں کیا سامنے آیاَ
تیسرا سوال،’’سکیورٹی میں ہوئی چوک کےلئے بی جےپی حکومت میں کون ذمہ دار ہے۔‘‘

واضح رہے کہ گزشتہ سال 14 فروری کو جیش محمد کے ایک خود کش حملہ آور نے جموں و کشمیر کے پلوامہ ضلع میں سنٹرل ریزرو پولیس فورس بس (سی آر پی ایف) کے ایک قافلے کو نشانہ بناتے ہوئے دھماکہ خیز مواد سے بھری کار میں دھماکہ کرکے واردات کو انجام دیا تھا۔ اس حملے میں 40 سے زائد سی آر پی ایف جوان شہید ہو گئے تھے اور 10 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close