تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

پاکستان سے بات چیت کے علاوہ ہندوستان کے پاس کوئی راستہ نہیں: قصوری

پاکستان کے سابق وزیر خارجہ خورشید محمود قصوری نے کہا کہ پاکستان سے بات چیت کرنے کے علاوہ ہندوستان کے پاس کوئی راستہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اورپاکستان کے درمیان صرف گفت وشنید سے ہی امن و امان بحال ہوسکتا ہے۔

لاہور کے الحمرہ میں منعقدہ ایک فکری اجلاس کے پہلے دن مسٹر قصوری نے قد آور صحافی نظام سیٹھی کے ساتھ ’ہندوستان میں الیکشن اور جنوبی ایشیا میں قیام امن کے امکانات‘ کے موضوع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا،’ہم نے کرتار پور کوریڈور کو کھولنے کی پہل یہ مانتے ہوئے کی ہے کہ باہمی تعلقات کےبغیر دونوں ملکوں کے درمیان قیام امن نہیں ہو سکتا۔ حقیقت یہ ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان مستقل قیام امن محض باہمی تعلقات میں ہی مضمر ہے، لیکن بدقسمتی سے ابھی تک اس کی شروعات نہیں ہوئی ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ دونوں مککوں کے درمیان اچھے تعلقات قائم کرنے کے لیے دوبارہ بات چیت شروع کرنے کے تعلق سے میں پر امید ہوں۔ انہوں نے کہا،’ وزیر اعظم عمران خان نے کہا تھا کہ اگر ہم جنگ نہیں چاہتے ہیں، تو ہمارے پاس محض گفتگو کا راستہ بچتا ہے‘۔

مسٹر قصوری نے ہندوستان کے آئندہ لوک سبھا الیکشن کے سلسلے میں کہا کہ اگر اپوزیشن پارٹیاں بر سر اقتدار بی جے پی کے خلاف عظیم اتحاد بناتی ہیں، تو وہ آئندہ عام انتخابات میں فتحیاب ہو سکتی ہیں اور حکومت بنا سکتی ہیں۔ انہوں نے کہا،’ اگر مسٹر مودی دوبارہ اقتدار میں آتے ہیں، تو انھیں پاکستان کے ساتھ گفتگو کرنی ہوگی۔ وہ پہلے بھی لاہور آ چکے ہیں‘۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close