تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

پاکستانی وزیر خزانہ کا خلاصہ، ملک دیوالیہ ہونے کے دہانے پر

پاکستان کے وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ پاکستان کی قرض کی قدر اتنی خطرناک اونچائی پر پہنچ چکی ہے کہ ملک دیوالیہ ہونے کے دہانے پر پہنچ گیا ہے۔

سوشل میڈیا کے ساتھ ملک کی معیشت کے سلسلے میں سوال وجواب کے خصوصی اجلاس میں مسٹر عمر نے بدھ کو کہا کہ ’’آپ اتنے بھاری بھرکم قرض کے بوجھ کے ساتھ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے پاس جا رہے ہیں۔ ہمیں بھاری فرق کو پاٹنا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ’’اگر پي ایم ایل-این دور کو دیکھیں تو مہنگائی ڈھائی پوائنٹس میں تھی، ہم شکرگزار ہیں کہ ابھی یہ اس سطح کو نہیں چھو پائی ہے‘‘۔

’جیو نیوز‘ کے مطابق وزیر خزانہ نے کہا کہ ماضی کی طرح مہنگائی ابھی ڈھائی پوائنٹس کو نہیں چھو پائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’پہلے دیکھیں تو مہنگائی نے سماج کے ہر طبقے کو یکساں طور پر متاثر کیا. یہ صحیح ہے کہ مہنگائی نے غریبوں پر زیادہ اثر ڈالا، ہماری حکومت میں یہ صورت حال مختلف ہے، زیادہ آمدنی والے طبقہ کے مقابلے میں غریبوں پر مہنگائی کا نسبتاً کم اثر ہوا ہے‘‘۔

اسدعمر نے مانا کہ معیشت میں کساد بازاری کے نتیجے میں روزگار کی شرح سست ہے. انہوں نے کہا ’’آپ کہہ رہے ہیں میری ساری پالیسیاں اسحاق ڈار کی طرح ہی ہیں، اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ میں نے معیشت کو چوپٹ کر ڈالا. ان کی مدت کے دوران پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار برآمدات میں اضافہ نہیں ہوا۔ ڈالر مضبوط ہوا پہلے کی اقتصادی پالیسیوں کی وجہ سے اور اس وجہ سے ایک ملک کے ناطے ہمیں اتنا زیادہ نقصان ہوا۔ یہ طلب اور رسد کی قیمت ہے‘‘

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close