تازہ ترین خبریںکھیل کھلاڑی

ٹیسٹ رینکنگ: کوہلی کی لمبی چھلانگ، خطرے میں اسمتھ کا تاج

ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی نے پنے میں جنوبی افریقہ کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میں اپنی ناقابل شکست 254 رنز کی ریکارڈ ساز اننگز کی بدولت آئی سی سی کی پیر کو جاری تازہ ٹیسٹ رینکنگ میں 37 پوائنٹس کی لمبی چھلانگ لگائی ہے اور وہ آسٹریلیا کے اسٹیون اسمتھ سے تاج چھیننے کے قریب پہنچ گئے ہیں۔

رن مشین وراٹ اپنے دوسرے مقام پر برقرار ہیں لیکن ناٹ آؤٹ ڈبل سنچری کی بدولت وہ 899 پوائنٹس سے 37 درجہ بندی پوائنٹس کی چھلانگ لگا کر 936 پوائنٹس پر پہنچ گئے ہیں۔ وراٹ اور اسمتھ کے درمیان اب صرف ایک پوائنٹ کا فاصلہ رہ گیا ہے اور ہندوستانی کپتان تیسرے ٹیسٹ میں اسمتھ سے نمبر ایک کا تاج چھین سکتے ہیں۔ وہ ٹیسٹ رینکنگ میں نمبرون بننے سے دو پوائنٹس پیچھے رہ گئے ہیں۔ وراٹ نے پنے ٹیسٹ میں ناقابل شکست 254 رنز کی اننگز کھیلی جس سے وہ پھر سے 900 پوائنٹس سے اوپر پہنچ گئے ہیں۔ نمبر ون پر اب بھی آسٹریلوی کھلاڑی اسمتھ ہیں جن کے کھاتے میں 937 پوائنٹس ہیں۔ ہندوستانی کپتان کی یہ بہترین درجہ بندی ہے اور وہ آل ٹائم بہترین درجہ بندی کے معاملے میں 11 ویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔ آل ٹائم بہترین درجہ بندی کے معاملے میں لیجنڈ اوپنر سنیل گواسکر 916 پوائنٹس اور 24 ویں مقام کے ساتھ بہت پیچھے چھوٹ گئے ہیں۔

وراٹ پہلے ٹیسٹ میچ میں فلاپ ہونے کے بعد جنوری 2018 کے بعد پہلی بار آئی سی سی ٹیسٹ رینکنگ میں 900 پوائنٹس سے نیچے آئے تھے، لیکن پنے میں ڈبل سنچری اننگز کھیل کر وراٹ دوبارہ 900 پوائنٹس کے پار پہنچ گئے۔ آئی سی سی کی آل ٹائم ریٹنگ میں آسٹریلیا کے سر ڈان بریڈمین 961 پوائنٹس کے ساتھ سرفہرست جگہ پر برقرار ہیں۔

پنے میں اپنے کیریئر کی دوسری سنچری بنانے والے اوپنر مینک اگروال نے آٹھ مقام کی لمبی چھلانگ لگائی ہے اور وہ 657 ریٹنگ پوائنٹس کے ساتھ اپنے سب سے بہترین 17 ویں مقام پر پہنچ گئے ہیں۔ پہلے ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سنچری بنانے والے اوپنر روہت شرما کو پنے میں سستے میں آؤٹ ہونے کا نقصان ہوا ہے اور وہ پانچ مقام گر کر 17 ویں سے 22 ویں مقام پر کھسک گئے ہیں۔

پنے میں 91 رن کی شاندار اننگز کھیلنے والے آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ نے بھی 12 مقام کی لمبی چھلانگ لگائی ہے اور وہ 551 کی اپنی بہترین درجہ بندی کے ساتھ 52 ویں سے 40 ویں مقام پر پہنچ گئے ہیں۔ پنے میں نصف سنچری بنانے والے اجنکیا رہانے ایک جگہ کے فائدے کے ساتھ نویں مقام پر پہنچ گئے ہیں۔

چتیشور پجارا کا چوتھا مقام بنا ہوا ہے لیکن وہ 818 درجہ بندی پوائنٹس سے 817 درجہ بندی پوائنٹس پر آ گئے ہیں۔ نیوزی لینڈ کے کین ولیم تیسرے مقام پر بنے ہوئے ہیں۔ جنوبی افریقہ کے كوئنٹن ڈی کوک تین مقام گر کر 10 ویں نمبر پر کھسک گئے ہیں۔ پاکستان کے بابر اعظم کیریئر کی بہترین پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں۔ جنوبی افریقہ وکٹ کیپر بلے باز کوئنٹن ڈی کو ک کی تنزلی کے بعد اجنکیا رہانے، کرونارتنے اورٹام لاتھم کو ترقی ملی ہے۔ ایڈن مارکرم کی ناقص فارم کے باعث پاکستان کے بابر اعظم کیریئر کی بہترین15ویں پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں۔ پاکستان کے اسد شفیق19ویں، اظہرعلی 21ویں اور کپتان سرفراز احمد 39 ویں نمبر پر ہیں جب کہ حارث سہیل ترقی پاکر 46ویں پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں۔

پنے ٹیسٹ میں ہندوستان کی اننگز اور 137 رنز کی شاندار فتح میں اہم کردار ادا کرنے والے ہندوستانی گیند بازوں کو بھی درجہ بندی میں فائدہ ملا ہے۔وشاکھاپٹنم ٹیسٹ میں کل آٹھ وکٹ لے کر ٹاپ 10 میں واپسی کرنے والے آف اسپنر روی چندرن اشون نے آگے بڑھنے کا سلسلہ پنے میں بھی جاری رکھا۔پنے میں کل چھ وکٹ لینے کی بدولت اشون تین مقام کی بہتری کے ساتھ مشترکہ 10 ویں سے ساتویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔ اشون 12 ریٹنگ پوائنٹ کے سدھار کے ساتھ 792 درجہ بندی پوائنٹس پر پہنچ گئے ہیں۔

دوسرے ٹیسٹ میں کل چھ وکٹ لینے والے فاسٹ بولر امیش یادو نے چھ مقام کا سدھار کیا ہے اور وہ 31 ویں سے 25 ویں مقام پر پہنچ گئے ہیں۔ محمد سمیع کا 16 واں مقام برقرار ہے جبکہ لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ دو مقام گر کر 14 ویں اور تیز گیند باز ایشانت شرما ایک جگہ کھسک کر 21 ویں مقام پر پہنچ گئے ہیں۔

آسٹریلیا کے پیٹ کمنز بولنگ میں پہلے، جنوبی افریقہ کے كیگسو ربادا دوسرے اور ہندستان کے جسپريت بمراه تیسرے مقام پر بنے ہوئے ہیں جبکہ جنوبی افریقہ کے ورنون فلینڈر پانچویں مقام سے آٹھویں مقام پر کھسک گئے ہیں۔ پاکستان کے محمد عباس11ویں اور لیگ ا سپنر یاسر شاہ17ویں نمبر پرموجود ہیں۔حسن علی ترقی پاکر46ویں پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں۔ آل راؤنڈر رینکنگ میں جڈیجہ دوسرے اور اشون پانچویں نمبر پر ہیں۔ ویسٹ انڈیز کے جیسن ہولڈر ٹاپ پر بنے ہوئے ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close