اترپردیشتازہ ترین خبریں

ٹکٹ نہیں دیا تو نتیجے اچھے نہیں ہوں گے: ساکشی مہاراج

ٹکٹ کٹنے کے ڈر سے ساکشی مہاراج نے دی بی جےپی کو دھمکی

اترپردیش کی اناو پارلیمانی سیٹ سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کے شعلہ بیان رکن پارلیمنٹ سچی دانند ہری عرف ساکشی مہاراج نے مبینہ طور پر پارٹی کے ریاستی صدر مہیندر ناتھ پانڈے کو خط لکھ کر دھمکی بھرے انداز میں اسی پارلیمانی حلقے سے ایک بار پھر ٹکٹ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

سوشل میڈیا میں وائرل ہو رہا یہ خط سات مارچ کو لکھا گیا ہے۔ ان کے دستخط والے اس خط میں ساکشی مہاراج نے علاقے میں نسلی مساوات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ پسماندہ طبقے کی نمائندگی کرنے والے پارٹی کے وہ اکلوتے نمائندے ہیں جبکہ پارلیمانی حلقے میں لودھی، کہار، نشاد، کشیپ اور ملاح سمیت دیگر پسماندہ طبقوں کے ووٹروں کی تعداد تقریباً 10لاکھ ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے یہ بھی لکھا ہے کہ اپنے موجودہ دور اقتدار میں ضلع کی ترقی کےلئے کافی کام کیا ہے جس کی مقامی عوام نے ستائش بھی کی ہے۔

بتا دیں کہ ساکشی مہاراج کا یہ خط ایسے وقت میں سامنے آیا ہے. جس میں یہ کہا جا رہا ہے کہ یوپی میں بی جے پی دو درجن سے بھی زیادہ موجودہ ارکان پارلیمنٹ کے ٹکٹ کاٹ سکتی ہے اور ایسا بتایا جا رہا ہے کہ ان ارکان پارلیمنٹ کی جگہ یوگی حکومت کے کئی وزراء کو ٹکٹ دیئے جا سکتے ہیں.اب جبکہ بہت جلد اس بات کا امکان ہے کہ بی جے پی ابتدائی مرحلے کے امیدواروں کی فہرست جاری کرنے جا رہی ہے. ایسے میں پارٹی کے ارکان پارلیمنٹ کے اندر سے عدم اطمینان کی آوازیں اٹھنا مخالفین کے لئے موضوع بحث بن سکتا ہے

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close