اپنا دیشتازہ ترین خبریں

ٹرمپ دورہ: امریکی صدر کا والہانہ استقبال

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے اہل خانہ کے ساتھ دو روزہ دورے پر ہندوستان پہنچے گئے اور ہوائی اڈے پر زبردست استقبال کے بعد ان کا قافلہ وزیراعظم نریندرمودی کے قافلے کے ساتھ تقریباً 22 کلومیٹر لمبے روڈ شو ’انڈیا روڈ شو‘ پر نکل پڑا۔

ایک گھنٹے سے زیادہ وقت تک چلے روڈ شو کے دوران مسٹر ٹرمپ نے مہاتما گاندھی کے سابرمتی آشرم میں بھی تقریباً 15منٹ کا وقت گزارا۔ انہوں نے وہاں ویزیٹرس بک میں لکھا،’’میرے دوست وزیراعظم نریندرمودی کو اس شاندار دورے کےلئے شکریہ۔‘‘مسٹر مودی اس موقع پر مسٹر ٹرمپ اور ان کی اہلیہ ملینیا کے ساتھ مسلسل موجود رہے۔انہوں نے دونوں کو مہاتما گاندھی آشرم میں واقع ’ہریدے کنج‘دکھایا اور اس کے بارے میں معلومات دی۔

اس موقع پر مسٹر ٹرمپ نے وہاں برامدےمیں رکھے چرخے پر بھی ہاتھ آزمایا۔ اس آشرم نے مسٹرٹرمپ اور ان کی اہلیہ کا استقبال روایتی طورپر سوت کی مالا پہنا کر کیا۔ اس موقع پر گاندھی جی کے پسندیدہ بھجن بھی بجائےگئے۔ مسٹر مودی اور ٹرمپ جوڑے نے ہریدے کنج کے برامدے میں بیٹھ کر ایک ساتھ تصویر بھی کھنچوائیں۔ یہاں آنے والے ہر سربراہ مملکت کا دورہ روایتی طور پر سا برمتی آشرم سے ہی شروع ہوتا ہے۔

مسٹر ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلینیا ٹرمپ اپنی گاڑی دی بیسٹ نامی بلیک لیموزن میں سوار ہوکر روڈ شو پر نکلےتھے۔جبکہ مسٹر مودی کی گاڑی ان کے آگے چل رہی تھی۔دوپہر 12بجے شروع ہوئے روڈ شو کے دوران راستے میں دونوں طرف لاکھوں لوگ سڑک کے کانے کھڑے تھے۔ اس کے علاوہ الگ الگ اسٹیجوں پر ہندوستانی ثقافت کی جھلک پیش کرتے ہوئے فن کار بھی موجود تھے۔ صدر ٹرمپ کی لیموزن بیسٹ سکیورٹی کے لحاظ سے دنیا کی بے مثال گاڑی ہے جسے میزائل سے بھی نشانہ نہیں بنایا جا سکتا۔

روڈ شو کا پہلا مرحلہ یہاں رانپ میں واقع مہاتما گاندھی کا تاریخی سابرمتی آشرم ہےجہاں کچھ وقت بتانے کے بعد مسٹر ٹرمپ واپس روڈ شو سے ہوتے ہوئے موٹیرا اسٹیڈیم پہنچیں گے اور نمستے ٹرمپ پروگرام میں شرکت کریں گے۔ روڈ شو یہاں مسٹر مودی کے پسندیدہ سابرمتی ریورفرنٹ کے ایک حصے سے بھی گزرےگا۔ ہوائی اڈے سے یہ کینٹ اور سبھاش برج ہوتے ہوئے سابرمتی آشرم پر پہنچا۔ مسٹر ٹرمپ کا طیارہ یہاں سردار ولبھ بھائی پٹیل بین الاقوامی ہوائی اڈے پر پہلے سے مقررہ وقت کے مطابق 11بج کر 40منٹ پر اترا۔ ان کے استقبال کےلئے خود وزیراعظم نریندر مودی وہاں موجود تھے۔ انہوں نے مسٹر ٹرمپ سے گلے لگ کر گرمجوشی کے ساتھ ان کا استقبال کیا۔

یہاں رانپ علاقے میں واقع مہاتما گاندھی کے اس تاریخی آشرم پر پہنچیں گے جہاں یہاں آنے والے ہر بڑے سربراہ مملکت کو روایت کے طور پر لایا جاتا رہا ہے۔ وہ اور ان کی اہلیہ میلینیا ٹرمپ، مسٹر مودی کے ساتھ آشرم میں سابرمتی ندی کے کنارے بھی کچھ وقت گزاریں گے۔ ہوائی اڈے سے ہی شروع ہونے والے روڈ شو کے دوران سڑک کے کنارے بنے 28 اسٹیجوں پر فن کار ہندوستانی ثقافت کی جھلک پیش کرتے ہوئے رنگارنگ پیش کش دیں گے۔مسٹر ٹرمپ کے اس دورے کے پیش نظر شہر کے ٹریفک نظام میں وسیع تبدیلی کی گئی ہے۔

احمدآباد کے پولیس کمشنر آشیش بھاٹیا نے بتایا کہ مسٹر ٹرمپ دوپہرساڑھے تین بجے یہاں ہوائی اڈے سے آگرہ روانہ ہوئے۔ وہاں تاج محل کا دیدار کرنے کے بعد وہ شام کو نئی دہلی روانہ ہوجائیں گے جہاں اگلے دن یعنی 25 فروری کو کئی پروگراموں میں حصہ لینے کے بعد رات کو واپس لوٹ جائیں گے۔ مسٹر بھاٹیا نے بتایا کہ سکیورٹی میں امریکی خفیہ سروس کے افسران کے علاوہ مقامی پولیس،ہندوستانی فضائیہ ،نیم فوجی دستہ،ایس پی جی، این ایس جی وغیرہ کا تال میل ہے۔ اس میں ڈی سی پی سطح کے 33، اے سی پی سطح کے 75، انسپیکٹر سطح کے 300 اور سب انسپیکٹر سطح کے 1000افسر تعینات ہیں۔

اس کے علاوہ 12 ہزار جوان بھی سکیورٹی بندوبست میں لگائے گئے ہیں۔ بم کو ناکارہ بنانے والے 15دستے بھی تعینات ہیں۔ڈرون وغیرہ سے ہونےو الے حملے کو روکنے کےلئے بھی پورے نظام کو فعال کیا گیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close