آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

نیوزی لینڈ: مسجد میں فائرنگ- 49 افراد ہلاک، بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم بال بال بچی

نیوزی لینڈ میں کرائسٹ چرچ کے دو مساجد میں جمعہ کو نامعلوم مسلح افراد نے اندھا دھند فائرنگ کی جس میں 49 افراد ہلاک اور 20 سے زیادہ لوگ شدید زخمی ہو گئے۔ فائرنگ سے عین قبل نماز ادا کرنے کے لئے مسجد میں داخل ہونے والی بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے ممبران اس حملے میں بال بال بچے۔

مقامی ذرائع ابلاغ کی خبر میں بتایا گیا ہے کہ ایک بندوق بردار نے وسطی کرائسٹ چرچ کے ہیگلے پارک میں واقع النور مسجد میں اچانک فائرنگ شروع کردی، جہاں بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے ارکان پہنچنے ہی والے تھے۔ حملے میں کرکٹ ٹیم کے کسی بھی رکن کو کوئی چوٹ نہیں پہنچی ہے۔ تمام اراکین محفوظ ہیں۔ حملے کی وجہ سے، نیوزی لینڈ اور بنگلہ دیش کے درمیان ہفتہ کو شروع ہونے والے تیسرے ٹیسٹ میچ پر بحران کا بادل منڈکانے لگا ہے۔

حملے کے بعد، بنگلہ دیش کے بلے باز تمیم اقبال نے ٹویٹ کرکے کہا ’’پوری ٹیم حملے میں محفوظ ہے۔ خوف زدہ تجربہ، برائے مہربانی ہمارے لئے دعا کریں‘‘۔ دوسرا حملہ کرائسٹ چرچ کے مضافات میں ایک مسجد میں ہوا۔ پولیس نے ایک مشتبہ شخص کو گرفتار کرلیا ہے۔

دوسری طرف نیوزی لینڈ کے وزیراعظم جیسندآڈرن نے یہاں پریس کانفرنس میں آج کے دن کو سب سے سیاہ دنوں میں سے ایک بتایا۔ انہوں نے کہا، ’’یہ واضح ہے کہ یہ نیوزی لینڈ کے تاریک ترین دنوں میں سے ایک ہے۔ آج جو یہاں ہوا وہ ایک سنگین پرتشدد واقعہ ہے۔ میری ہمدردی اور مجھے یقین ہے کہ پورے نیوزی لینڈ کے باشدوں کی ہمدردی متاثرین اور ان کے خاندانوں کے ساتھ ہیں‘‘۔

دریں اثنا کرائسٹ چرچ کی میئر لیانے ڈیلزیل نے کہا کہ فائرنگ کے واقعات سے وہ اتنی غمگین ہیں کہ وہ الفاظ میں ادا نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہا،’’میں نے کبھی بھی کرائسٹ چرچ میں ایسے کسی سانحے کی توقع نہیں کی تھی۔ میں نے کبھی بھی نیوزی لینڈ میں ایسے واقعہ کا تصور نہیں کیا تھا۔”

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close