تازہ ترین خبریںفلمی دنیا

نیشنل فلم ایوارڈ کا اعلان، آیوشمان اور وکی بنے سرفہرست اداکار

گجراتی زبان کی’ہیلورو‘ کو سرفہرست فیچر فلم منتخب کیا گیا ہے۔ یہاں جمعہ کو ہوئے نیشنل فلم ایوارڈ 2018 کے اعلان میں ہندی فلموں ’اری، اندھادھن‘ اور پدماوت کا بھی جلوہ رہا۔

فیچر فلموں کی فہرست میں جوری کے مرکزی پینل کے صدر راہل روَیل نے جمعہ کو سنہ 2018 کے لیے ان ایوارڈز کا اعلان کیا۔ اس فہرست میں 45 انعام دیئے جائیں گے جبکہ غیر فیچر فلم کی فہرست میں 21 انعام دیئے جائیں گے۔ کیرتی سریش فلم ’مہانتی‘ میں ان کے کردار کے لیے سرفہرست ادکارہ منتخب کیا گیا۔ آیوشمان کھرانہ اور وکی کوشل کو اری دی سرجیکل اسٹرائک کے لیے مشترکہ طور پر سرفہرست اداکار چنا گیا ہے۔

فلم اری کے ڈائریکٹر کو آدتیہ دھر کو سر فہرست ڈائریکٹر قرار دیا گیا۔ اریجیت سنگھ کو پدماوت کے گانے’بینتے دل مستریا میں…‘ کے لیے سرفہرست مرد پلے بیک گلوکااور بِندو مالنی کو کنڑ فلم نتھی چارامی کے گانے ’مایاوی مناوے…‘ کے لیے سر فہرست خاتون پلے بیک گلوکارہ چُنا گیا ہے۔ سنجے لیلا بھنسالی کو فلم پدماوت(نغموں کی میوزک‘ کے لیے اور شاشوت سچدیوکو فلم اُری (بیک گراؤنڈ میوزک) کے لیے سرفہرست موسیقار اعلان کیا گیا ہے۔ منجوناتھ ایس کو فلم نتھی چارامی کے گانے’مایاوی مانوے…‘ کے لیے سر فہرست نغمہ نگار چُنا گیا ہے۔

بہترین سپورٹنگ اداکار کا ایوارڈ سوانند کِرکِرے کو مراٹھی فلم چُمبک اوربہترین سپورٹنگ اداکارہ کا ایوارڈ’بدھائی ہو‘ کے لیے سریکھا سیکری کو دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔
بہترین اسکرین پلے رائٹنگ کے لیے تین افراد کا انتخاب کیا گیا ہے۔ بنیادی رائٹنگ کے لیے تیلگو فلم ’دی ارجن لا سو‘کے رائٹرراہل رویندرن کو، اڈوپٹنگ رائٹنگ کے لیے اندھادھن کے رائٹرس شری رام راگھون، اریجیت وشواس، یوگیش چندیکر، ہیمنت راؤ اورپوجا لادھا سورتی کواور مکالمہ (ڈائی لاگ) کے لیےبنگلہ فلم ’تاریخ‘ کی رائٹر چُرنی گانگولی کو ایوارڈ سے نوازا جائے گا۔

امت شرم کی ہدایتکاری میں بننے والی ہندی فلم ’بدھائی ہو‘ کو مکمل انٹرٹینمنٹ میں سرفہرست ہر دلعزیز فلم اور آر بالکی کی ہدایت کاری میں بننے والی فلم پیڈمین کو سماجی سروکار سے متعلق سرفہرست فلم قرار دیا گیا۔ قومی یکجہتی کو فروٖغ دینے والی بہترین فلم’ نرگس دت ایوارڈ‘ کے لیے کنڑ میں بننے والی فلم اونڈَلَّا ایراڈلَّا‘ کو چُنا گیا ہے۔ ماحولیات کے تحفظ کے مسئلے پر بننے والی بہترین فلم مراٹھی کے’پانی‘ کو منتخب کیا گیا ہے جس میں ایک سوکھے سے متاثر گاؤں کی کہانی دکھائی گئی ہے جہاں لوگ آخر میں اپنے پانی کا ذریعہ خود ہی بناتے ہیں۔

بہترین سنیمیٹوگرافی کا ایوارڈ ملیالم فلم اولو کے کیمرامین ایم جے رادھا کرشنن کو دیا جائے گا جبکہ ایڈیٹنگ کا ایوارڈ کنڑ فلم نتھی چارامی کے ایڈیٹر ناگیندر کے اجین کو ملے گا۔ پدماوت کے گانے ’گھومر‘ کے لیے کُروتی مہیش ماگھیہ اور جیوتی تومر کو سرفہرست رقص ہدایتکار اعلان کیا گیا ہے۔ کنڑ فلم کے جی ایف کے لیے وکرم مورے اور انبو اریو کو سرفہرست ایکشن ہدایت کارچُنا گیا ہے۔

کسی ہدایتکار کی سرفہرست پہلی فلم کو اندراگاندھی ایوارڈ کے لیے مراٹھی فلم نال کو چُنا گیا ہے۔ اس کی ہدایت کار سدھاکر ریڈی یَکَّانی ہیں۔ اس میں ایک بچے کی کہانی کے ذریعے سے بچہ گود لینے کی اخلاقیات کے بارے میں پیغام دینے کی کوشش کی گئی ہے۔ سر فہرست اطفال فلم کا ایوارڈ فلم ساز، ہدایتکار رِشبھ شیٹی کی کنڑ میں بننے والی فلم ’سرکاری ہریا پراتھمیکا شالے کسارگوڈو‘ کو دیا جائے گا۔ بہترین اطفال اداکار کا ایوارڈ چار بچوں کو مشترکہ طور پر دیا جائے گا۔ ان میں اون ڈَلَّا ایراڈلَّا(کنڑ) کے لیے پی وی روہت، ہرجیتا (پنجابی) کے لیے سمیپ سنگھ، حامد (اردو) کے لیے طلحہ ارشد ریشی اور نال (مراٹھی) کے لیے شری نیواس پوکالے شامل ہیں۔

بہترین فیچر فلم ہیلارو(گجراتی) میں گاؤں کی خواتین کے گروپ کی کہانی ہے جو سماجی تبدیلیوں کے لیے متحد ہوکر کام کرتی ہیں۔ اسے جوری کے خصوصی ایوارڈ کے لیے بھی منتخب کیا گیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close