اترپردیشتازہ ترین خبریں

’نیائے یاترا‘ سے گھبرائی یوگی حکومت، کانگریسی لیڈر جتن پرساد سمیت کئی نظر بند

چنمیا نند جنسی استحصال معاملے میں متأثرہ کو انصاف دلانے کے لئے کانگریس کی شاہجہاں پور سے لکھنؤ تک کانگریس کی’نیائے یاترا‘ کو ضلع انتظامیہ نے آج روک دیا اور کئی لیڈروں وکارکنوں کو نظر بند وگرفتار کرلیا ہے۔

اترپردیش کانگریس شاہجہاں پور میں پیر کو طالبہ کو انصاف دلانے کے حوالے سے سڑکوں پر اتری۔ شاہجہاں پور میں دفعہ 144 نافذ ہے۔ پولیس نے کانگریس کے کئی سینئر لیڈروں کو نظر بند کردیا گیا ہے۔ ان کے گھروں کے باہر پولیس تعینات ہے کانگریس رکن اسمبلی اجے کمار للو، سابق مرکزی وزیر جتن پرساد سمیت کئی لیڈروں کو ان کے گھروں میں ہی نظر بند کردیا گیا ہے۔ پولیس نے شاہجہاں پور ضلع کانگریس دفتر پر لگے ٹینٹ کو بھی اکھاڑ دیا ہے۔ ان کی پولیس سے بھی جم کر نوک جھونک ہوئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اپنے گھر میں نظر بند جتن پرساد یاترا کے لئے نکلنے کی ضد پر اڑے ہوئے ہیں۔ کسی بھی وقت ان کی گرفتاری ہوسکتی ہے۔

جتن پرساد نے انتظامیہ کی اس کاروائی کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے کہا کہ انصاف کی لڑائی کے تحت متأثرہ کو اانصاف دلانے کے لئے پرامن مارچ نکالنے جارہے تھے جسے روک دیا گیا۔ جتن پرساد نے کہاکہ پہلے ہی بتایا دیا تھا کہ یاترا شاہجہاں پور سے نکل کر لکھنؤ تک جائے گی۔ ریپ متأثرہ جو انصاف کی آواز لگا رہی ہے یہ اس کے حق میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کا یہ فیصلہ کانگریس کارکنوں اور کانگریس قیادت کو برداشت نہیں ہے۔

’پد یاترا‘ کا پروگرام نہ ہونے دینے کی مخالفت کر رہے کانگریسی کارکنوں کو پولیس انتظامیہ نے ٹاؤن حال میں پروگرام کی جگہ سے گرفتار کرلیا ہے۔ سبھی کو پولیس لائن لایا گیا ہے۔ اس سے قبل پروگرام کی قیادت کررہے کانگریس لیڈر اجے پال سنگھ للو اور قومی سکریٹری دھیرج گرجر کو پہلے ہی گرفتار کر کے پولیس لائن لے جایا گیا تھا۔

کانگریس کارکن اس کی مخالفت میں ٹاؤن حال واقع پروگرام کی جگہ پر ہی بیٹھ گئے اور جم کر نعرے بازی اور مظاہرہ کرنے لگے۔ اس کو دیکھتے ہوئے پولیس انتظامیہ کے ساتھ ۔ساتھ پی اے سی کی بٹالین کو بھی بلا لیا گیا تھا۔ پولیس نے درجنوں کانگریسی کارکنوں کو گرفتار کر کے پولیس لائن لے گئی ہے جہاں سے انہیں جیل بھیجا جائے گا۔ سابق مرکزی وزیر جتن پرساد و کارگذار ضلع صدر کوشل مشرا کو پولیس نے نظر بند کردیا ہے۔ جتن پرساد کی رہائش پر بھار ی تعداد میں پولیس ٹیم کو لگا کو تعینات کیا گیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close