اپنا دیش

نربھیا کیس: پون کے نابالغ ہونے کا دعویٰ سپریم کورٹ نے بھی کیا مسترد

سپریم کورٹ نے نربھیا اجتماعی عصمت دری کیس کے گنہگار پون کی عرضی مسترد کر دی ہے۔ جسٹس پنڈورا کی صدارت والی بنچ نے اجتماعی عصمت دری اور قتل کے وقت نابالغ ہونے کا اس کا دعویٰ ٹھکرا دیا ہے، اس طرح پون پھانسی سے ایک قدم اور قریب پہنچ گیا ہے۔ اس سے پہلے دہلی ہائی کورٹ نے 19 دسمبر، 2019 کو پون کی عرضی مسترد کر دی تھی۔ کورٹ نے عدالت کا قیمتی وقت برباد کرنے کے لئے مجرم کے وکیل اے پی سنگھ پر 25 ہزار روپے کا جرمانہ بھی لگایا تھا۔

عدالت نے دہلی بار کونسل کو وکیل اے پی سنگھ کے خلاف کارروائی کرنے کو کہا تھا۔ دراصل وکیل اے پی سنگھ نے کورٹ میں دو حلف نامہ داخل کیا تھا۔ مارچ میں اے پی سنگھ نے پون کی جانب سے درخواست داخل کی تھی لیکن جو حلف نامہ داخل ہوا وہ 10 دسمبر کا ہے، اسی وجہ سے کورٹ نے بار کونسل آف انڈیا کو کہا تھا کہ اے پی سنگھ کے خلاف کارروائی کرے۔ پون کی درخواست میں کہا گیا کہ دسمبر، 2012 میں واقعہ کے وقت وہ نابالغ تھا۔ درخواست میں کہا گیا تھا کہ عمر کی جانچ کے لئے اس کا میڈیکل ٹیسٹ نہیں کرایا گیا۔ اس جیووینائل جسٹس ایکٹ کے تحت شک کا فائدہ دیا جانا چاہئے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close