اپنا دیش

نربھیا معاملہ: مجرم اکشے کا پھانسی سے بچنے کا نیا حربہ

سرخیوں میں چھائے نربھیا آبروریزی اور قتل کیس کے مجرم اکشے نے نیا حربہ اپناتے ہوئے صدر کے سامنے دوبارہ رحم کی درخواست دائر کی ہے جبکہ صدر اکشے کی اس سے پہلے رحم کی درخواست مسترد کر چکے ہیں۔

اکشے کے وکیل اے پی سنگھ کا کہنا ہے کہ صدر نے جو رحم کی درخواست مسترد کی تھی وہ نامکمل تھی۔ لہذا ہم نے دوبارہ صدر سے رحم کی درخواست کی ہے۔ اس سے پہلے نربھیا کے مجرم پون اور اکشے نے تین مارچ کو پھانسی کے لئے جاری ڈیتھ وارنٹ پر روک لگانے کے لئے پٹیالہ ہاؤس ٹرائل کورٹ میں عرضی داخل کی تھی۔ انہوں نے دلیل دی ہے کہ پون کی سپریم کورٹ میں دائر كيوریٹو پٹیشن پر سماعت باقی ہے اور اکشے کی صدر کے پاس دوبارہ دائر رحم کی درخواست زیر التواء ہے۔

واضح رہے کہ نربھیا کے مجرم اکشے نے ہفتہ کو صدر کے پاس دوبارہ رحم کی درخواست بھیجی ہے۔ صدر اکشے کی رحم کی درخواست پہلے ہی مسترد کر چکے ہیں۔ اس کے علاوہ دوسرے مجرم پون نے عدالت میں دائر كيوریٹو پٹیشن کے ذریعے اپنی پھانسی کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کرنے کی کوشش کی ہے۔ اس درخواست پر سپریم کورٹ دو مارچ کو سماعت کرے گی، جس میں پانچ ججوں کی بنچ کی بند کمرے میں سماعت ہوگی۔ پون نے پھانسی کی سزا کے خلاف عدالت عظمی میں جمعہ کو كيوریٹو پٹیشن دائر کی تھی۔

حالانکہ پون کی كيوریٹو پیٹشن کے بعد صدر کے پاس رحم کی درخواست دائر کرنے کا قانونی حق بچا ہے۔ عدالت عظمی میں كيوریٹو عرضی خارج ہونے کے بعد صدر کے پاس رحم کی درخواست پر فیصلہ آنے میں تین چار دن کا وقت لگتا ہے جس کے پیش نظر تین مارچ کو ڈیتھ وارنٹ پر عمل ہو پانا مشکل ہے، تو تین مارچ کے بعد ایک اور نیا ڈیٹھ وارنٹ جاری ہونا طے ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close